افغانستان اور آسٹریلیا کا تاریخی ٹیسٹ غیر معینہ مدت کیلئے ملتوی ہونے کا امکان

میلبورن :طالبان کی جانب سے خواتین کے کرکٹ کھیلنے پر پابندی کے اعلان کے بعد آسٹریلیا اور افغانستان کے درمیان واحد ٹیسٹ میچ غیر معینہ مدت کیلئے ملتوی ہونے کا امکان ہے۔

برطانوی خبر رساں ادارے رائٹرز کی ایک رپورٹ کے مطابق  آسٹریلیا کے علاقے تسمانیہ میں کرکٹ کی انتظامی باڈی ’کرکٹ تسمانیہ‘ کے سربراہ ڈومینک بیکر کا کہنا ہے کہ آسٹریلیا آئندہ ہفتے افغانستان کے خلاف کھیلا جانے والا ٹیسٹ میچ غیر معینہ مدت  کے لیے ملتوی کرنے کا باضابطہ اعلان کردے گاتاکہ افغانستان خواتین کے کھیلوں  سے متعلق اپنے نکتہ نظر پر نظر ثانی کرسکے۔

افغانستان اور آسٹریلیا کے درمیان تاریخی ٹیسٹ میچ 27 نومبر کو  شیڈول

خیال رہے کہ افغانستان اور آسٹریلیا کے درمیان تاریخی ٹیسٹ میچ 27 نومبر کو ہوبارٹ میں شیڈول ہے۔

 رائٹرز کے مطابق ، بیکر نے آسٹریلوی میڈیا سے گفتگو کے دوران بتایا کہ آسٹریلیا اور افغانستان کے درمیان کھیلا جانے والا میچ رواں ہفتے ملتوی کردیا جائے گا، فیصلہ اگلے چند دنوں میں سامنے آئے گا۔

بیکر کے مطابق، یہ  فیصلہ افغانستان کی حکومت کو نئی سمت دکھانے کے حوالے سے کیا گیا ہے تاکہ وہ دیکھ لیں کہ انھیں کھیلوں میں واپس آنے کے لیے کیا کرنا ہے۔

کرکٹ تسمانیہ کے سربراہ کا کہنا تھا کہ  یہ قابل قبول نہیں کہ افغانستان خواتین کو کھیلوں کی اجازت  نہ دے ، اگر وہ کرکٹ میں مردوں کے مقابلوں کے خواہشمند ہیں تو خواتین کے کھیلوں سے متعلق کیے گئے فیصلے پر بھی غور کرنا ہوگا۔

سربراہ کرکٹ تسمانیہ کا مزید  کہنا تھا کہ ہم ٹیسٹ میچ کو مکمل طور پر منسوخ نہیں کریں گے جس کے پیش نظر افغانستان اور آسٹریلیا کے درمیان میچ بعد میں شیڈول کیا جاسکتا ہے۔

طالبان کی پابندی

واضح رہےکہ طالبان کے ثفاقتی کمیشن کے نائب سربراہ احمد اللہ واثق کی جانب سے آسٹریلوی میڈیا کو دیے گئے انٹرویو میں کہا گیا تھا کہ خواتین کو کرکٹ سمیت کسی ایسے کھیل کی اجازت نہیں دیں گے جس میں ان کا جسم اور چہرہ ڈھکا ہوا نہ ہو۔

احمد اللہ واثق کا یہ بھی کہنا تھا کہ خواتین کا کھیلوں میں حصہ لینا نہ تو مناسب ہے اور نہ ہی ضروری ہے، مخالفین کے ردعمل کی وجہ سے اسلامی اقدار کو پامال نہیں کریں گے۔

 افغانستان کرکٹ بورڈ کے نئے چیئرمین عزیزاللہ فضلی کا بیان

خیال رہے کہ اس سے قبل افغانستان کرکٹ بورڈ کے نئے چیئرمین عزیز اللہ فضلی نے رواں ماہ رائٹرز سے گفتگو کے دوران کہا تھاکہ وہ ملک میں خواتین کی کرکٹ کو فروغ دینے کے لیے پرعزم ہیں اور پر امید ہیں کہ آسٹریلیا کے خلاف واحد ٹیسٹ میچ آگے بڑھے گا۔