ظہیر عباس کی بیٹنگ سے بھارتی ٹیم بھی لطف اندوز ہوتی تھی، سنیل گواسکر

لاہور : سابق کپتان بھارتی ٹیم سنیل گواسکر کا کہنا ہے کہ ایشین بریڈمین کے رنز بھارتی ٹیم کے مفاد کے خلاف ہوتے لیکن دلکش بیٹنگ سے ہم بھی لطف اندوز ہوتے تھے۔

سابق کپتان بھارتی ٹیم سنیل گواسکر کا کہنا ہے کہ حریف ٹیمیں بھی ظہیر عباس کی بیٹنگ سے لطف اندوز ہوتیں تھیں، ایشین بریڈمین کے رنز بھارتی ٹیم کے مفاد کے خلاف ہوتے لیکن دلکش بیٹنگ سے ہم بھی لطف اندوز ہوتے تھے، حریف ٹیموں سے بھی بہت کچھ سیکھنے کا موقع ملتا ہے، ظہیر عباس کی رنز کے لیے بھوک ہمارے لیے ایک مثال تھی۔

سنیل گواسکر نے کہا کہ وہ کبھی50 یا 100 رنز سے خوش نہیں ہوتے بلکہ ڈبل سنچری اور اس سے بھی زیادہ کا سوچتے تھے، 1971 میں اوول ٹیسٹ کے دوران بھارتی ٹیم ہدف کا تعاقب کررہی تھی اور وہ حوصلہ افزائی کے لیے ڈریسنگ روم میں آگئے، کھلاڑیوں کیلیے بڑے یادگار لمحات تھے، ظہیر عباس کو بھارتی ٹیم بھی بڑی عزت کی نگاہ سے دیکھتی تھی، میرے ساتھ دوستی ہوئی جو ورلڈ الیون کے دورہ آسٹریلیا میں زیادہ پروان چڑھی اور اب تک قائم ہے۔