سینچری کی کوشش کافی دن سے کررہا تھا، روزے میں رضوان نے اچھا کھیلا، بابراعظم

سنچورین : قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم نے کہا ہے کہ اس سینچری کی کافی عرصے سے کوشش کر رہا تھا، رضوان کو کریڈٹ جاتا ہے، روزے کے ساتھ کھیلنا مشکل ہے۔

انہوں نے کہا کہ دوسراٹی ٹونٹی اچھا نہیں کھیلے تھے لیکن یہ جیت اہم تھی، جنوبی افریقہ ٹیم کو کریڈٹ جاتا کہ اس نے کھیل کا اچھا آغاز کیا۔

بابراعظم کا کہنا تھا کہ ہمارے بولرز نے کم بیک کیا اورانہیں200رنز تک روکا، پچھلے میچ میں وکٹیں گریں تو رسک نہ لینے کا سوچا۔

قومی ٹیم کے کپتان نے کہا کہ پچھلے میچ میں اچھا اختتام کرنے میں کامیاب نہیں ہوسکا تھا، میری کوشش ہوتی ہے اپنے پلان پر پورا عمل درآمد کروں، اس سینچری کی کافی عرصے سے کوشش کر رہا تھا۔

بابر اعظم نے کہا کہ ٹی ٹونٹی تیز کرکٹ ہے اس میں اکثر مار پڑ جاتی ہے، ہماری کوشش ہوتی ہے برا میچ گزر گیا اس پر فوکس نہ کریں۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ وکٹ اچھا تھا پارٹنر شپ کی ضرورت تھی، رضوان کے ساتھ بات چل رہی تھی کہ میچ ختم کرنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ رضوان کو کریڈٹ جاتا ہے، روزے کے ساتھ کھیلنا مشکل ہے، رضوان نے جیسی اننگ کھیلی اور پورا میچ بھی کھیلا وہ قابل تعریف ہے۔
یہ بھی پڑھیں: ’’شاٹس بابر مارتا ہے جھومتی پوری قوم ہے‘‘

قومی کپتان نے بتایا کہ ہمارا پلان تھا کہ رن ریٹ کو دیکھ کر ہی چل رہے تھے، رضوان بول رہا تھا کہ خود ہی میچ مکمل کرنا ہے، افسوس کہ آخر میں آؤٹ ہوگیا ریکارڈ نہ بن سکا۔

میڈیا سے گفتگو میں میں بابر اعظم نے مزید کہا کہ فخر زمان سے بات ہوئی کہ نیچے آکر تیزکھیل سکتا ہے،
فخر نے اوپننگ کے لیے نہیں کہا ٹیم پلان پر ہی عمل کیا، ٹی ٹونٹی اوپن کررہا ہوں لیکن ٹیم کی ضرورت کیلئے اوپر نیچے کرنا پڑتا ہے۔