عمر اکمل کیلئے ایک اور پریشانی : پی سی بی نے درخواست مسترد کردی

لاہور : عمر اکمل کی جانب سے جرمانے کی رقم قسطوں میں ادا کرنے کی درخواست پی سی بی نے مسترد کردی، عہدیداران کا کہنا ہے کہ ایسا نہیں لگتا کہ انہیں مالی پریشانی ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے قومی کرکٹر عمر اکمل پر عائد جرمانے کی قسطوں میں ادائیگی کی درخواست مسترد کردی ہے۔

پی سی بی عہدیداران کا کہنا ہے کہ عمر اکمل پہلے یکمشت جرمانہ ادا کریں پھر ری ہیپ پروگرام شروع کریں گے۔ عمر اکمل کے ٹیکس ریٹرن سے نہیں لگتا کہ انہیں کسی قسم کی مالی دشواری ہے۔
یہ بھی پڑھیں: اکستان ٹیم کے فاسٹ بولر اور کراچی کنگز کے ہیرو محمد عامر کو سالگرہ مبارک

عمر اکمل کو 2 مختلف واقعات میں پی سی بی اینٹی کرپشن کوڈ کے آرٹیکل 2.4.4 کی خلاف ورزی پر 17 مارچ کو نوٹس آف چارج جاری کیا گیا تھا۔ اینٹی کرپشن ٹربیونل کے روبرو پیشی کی درخواست نہ کرنے پر پی سی بی نے عمر اکمل کا معاملہ 9 اپریل کو چیئرمین ڈسپلنری پینل کو بھجوادیا تھا۔

واضح رہے کہ میچ فکسنگ کیس میں کھیلوں کی عالمی ثالثی عدالت نے عمر اکمل پر 42 لاکھ 50 ہزار روپے جرمانہ عائد کیا تھا اور عمر اکمل نے پی سی بی کو مالی حالات کی وجہ سے جرمانے کی اقساط کرنے کی درخواست دی تھی۔

عمراکمل اب تک جرمانہ ادا نہیں کرسکے ان کی درخواست بھی مسترد ہوچکی ہے عمر اکمل اگر رواں سال کا ڈومیسٹک سیزن کھیلنا چاہتے ہیں تو انہیں جلد جرمانہ ادا کرکے ری ہیب پروگرام مکمل کرنا پڑے گا، ورنہ پی ایس ایل کے ڈرافٹس میں بھی واپسی مشکل ہو جائے گی۔

خیال رہے کہ عمر اکمل پر 3 سال کی پابندی عائد کی ہے جو 20 فروری 2020 یعنی عمراکمل کی معطلی کے روز سے نافذ العمل ہے۔ نااہلی کی دونوں مدتوں پر ایک ساتھ عمل جاری ہے۔ عمر اکمل اب 19 فروری 2023 کو دوبارہ کرکٹ کی سرگرمیوں میں شرکت کے اہل ہوں گے۔