کامران اکمل کا سینٹرل پنجاب کے کوچ شاہد انور پر سینئر کھلاڑیوں سے امتیازی سلوک کا الزام

وکٹ کیپر بیٹسمین کامران اکمل چوٹ سے صحت یاب ہونے کے باوجود ٹیم میں شامل نہ کیے جانے پر وسطی پنجاب کی ٹیم مینجمنٹ سے ناراض ہیں۔ کامران اکمل نے اس معاملے پر چیئرمین پی سی بی احسان مانی اور سی ای او وسیم خان سے بھی رابطہ کیا ہے لیکن ابھی تک اس کا کوئی جواب موصول نہیں ہوا ہے۔ کامران اکمل کا کہنا تھا کہ سینٹرل پنجاب کے کوچ شاہد انور نے انہیں لائن اپ میں شامل کرنے سے انکار کردیا حالانکہ وہ انجری سے صحت یاب ہوگئے ہیں اور 100 فیصد فٹ ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یہ پہلا موقع نہیں جب شاہد انور نے کسی سینئر کھلاڑی کے ساتھ اس طرح کا سلوک کیا ہو۔ کامران اکمل کے مطابق انہوں نے اس معاملے پر وسطی پنجاب کے منیجر سے بھی رابطہ کیا۔دفاعی چیمپئن سینٹرل پنجاب نے قائداعظم ٹرافی کے فائنل میں جگہ بناتے ہوئے ایونٹ میں شاندار واپسی کی تھی اور فائنل میں ان کا مقابلہ خیبرپختونخوا سے ہوگا۔

5 راؤنڈز کے بعد جب سینٹرل پنجاب کی قیادت فاسٹ بائولر حسن علی کو ملی تب سنٹرل پنجاب پوائنٹس ٹیبل پر سب سے نیچے تھا۔ انہوں نے فائنل میں جگہ بنانے کے لئے باقی 5 میچوں میں سے 4 میں کامیابی حاصل کرکے ٹورنامنٹ میں ناقابل یقین واپسی کی ۔ کامران اکمل انگلی کی انجری کی وجہ سے قائداعظم ٹرافی سے باہر ہونے سے قبل 3میچوں میں کھیلے تھے، 38 سالہ وکٹ کیپر بلے باز کی پرفارمنس زیادہ اچھی نہیں تھی اور انہوں نے اپنی 6 اننگز میں 18.67 کی اوسط سے صرف 112 رنز بنائے۔ سینٹرل پنجاب اور خیبر پختونخوا کے مابین فائنل یکم جنوری کو نیشنل سٹیڈیم ،کراچی میں شروع ہوگا۔