شاداب خان کی فٹنس میں بہتری آنے لگی

قومی وائٹ بال نائب کپتان شاداب خان نے آج آکلینڈ میں ٹریننگ سیشن میں حصہ لیا اور ٹیم مینجمنٹ ان کی فٹنس سے مطمئن ہے جس کے بعد قوی امکان ہے کہ لیگ سپنر ہی نیوزی لینڈ کیخلاف پہلے ٹی ٹونٹی میں پاکستانی ٹیم کی قیادت کریںگے۔ ‏پاکستان اور نیوزی لینڈ کی ٹیموں کے درمیان 3 میچز کی ٹی ٹونٹی سیریز کا پہلا میچ 18 دسمبر کو ایڈن پارک ،آکلینڈ میں کھیلا جائیگا، ‏قومی ٹی ٹونٹی سکواڈ نے 3 گھنٹے کی۔

کھلاڑیوں نے فزیکل ٹریننگ کے بعد فیلڈنگ ڈرلز میں حصہ لیا اور بائولروں، بیٹسمینوں نے نیٹ پریکٹس کی۔ قومی وائٹ بال کپتان شاداب خان اب پہلے سے بہت بہتر محسوس کر رہے ہیں، انہیں ٹانگ میں کھچاؤ کی شکایت تھی جو اب کافی زیادہ دور ہو چکی ہے۔شاداب خان نے فیلڈنگ اور فزیکل ٹریننگ کے ساتھ ساتھ نیٹ پر بائولنگ اور بیٹنگ بھی کی۔ ٹیم مینجمنٹ نے شاداب خان کی فٹنس پر اطمینان کا اظہار کیا ہے اور امید ہے کہ نیوزی لینڈ کے خلاف ٹی ٹونٹی سیریز میں وہی قومی ٹیم کی قیادت کریں گے ۔

‏شاداب خان کو ون ڈے اور ٹی ٹونٹی فارمیٹ میں بابراعظم کا نائب مقرر کیا گیا تھا اور بابراعظم کا انگوٹھا فریکچر ہونے کے بعد اب وہی قومی ٹیم کی قیادت کریں گے، شاداب خان کے مکمل فٹ نہ ہونے کی وجہ سے یہ بحث بھی ہورہی تھی کہ اگر لیگ سپنر مکمل فٹ نہ ہوئے تو کپتانی کون کرے گا؟، اس ضمن میں وکٹ کیپر بیٹسمین محمد رضوان کا نام لیا جا رہا تھا جو کہ ٹیسٹ کرکٹ میں بابراعظم کے ڈپٹی ہیں۔