قومی خواتین کرکٹ ٹیم آئندہ ماہ جنوبی افریقا کا دورہ کرے گی

پاکستان خواتین کرکٹ ٹیم آئندہ ماہ جنوبی افریقہ کا دورہ کرے گی جس میں وہ تین ایک روزہ اور تین ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچز کھیلے گی۔پی سی بی اور کرکٹ ساؤتھ افریقہ کے درمیان طویل مذاکرات کے بعد دورے کو حتمی شکل دی گئی ہے۔ دونوں ممالک کی خواتین کرکٹ ٹیموں کے مابین سیریز بیس جنوری سے تین فروری تک جاری رہے گی۔ سیریز کا آغاز اور اختتام ڈربن سے ہوگا، وہاں میں کھیلا جانے والا پہلا ایک روزہ انٹرنیشنل میچ 20 جنوری جب کہ تیسرا اور آخری ٹی ٹونٹی میچ تین فروری کو ہوگا۔ یہ دونوں میچز برقی قمقموں کی روشنی میں کھیلے جائیں گے۔

سیریز کا دوسرا ایک روزہ انٹرنیشنل میچ بھی ڈربن میں کھیلا جائے گا، اس میچ کے لیے دونوں ٹیمیں تئیس جنوری کو مدمقابل آئیں گی۔ تیسرا ایک روزہ انٹرنیشنل میچ اور پہلے دونوں ٹی ٹونٹی انٹرنیشنل میچز بالترتیب 26، 29 اور 31 جنوری کو پیٹرمریٹزبرگ میں کھیلے جائیں گے۔ویمنز کرکٹ سلیکشن کمیٹی نے دورہ جنوبی افریقہ کے لیے 27 خواتین کھلاڑیوں کو حنیف محمد ہائی پرفارمنس سنٹر کراچی طلب کرلیا گیا ہے، جہاں تربیتی کیمپ کا آغاز 20 دسمبر سے ہوگا۔

اس دوران کیمپ میں شریک تمام خواتین کرکٹرز اور اسپورٹ اسٹاف بائیو سیکیور ماحول میں رہیں گے۔ یہ بائیو سیکیور ماحول بھی پی سی بی کے کوویڈ 19 پروٹوکولز کے عین مطابق ہوگا۔ بائیو سیکیور ماحول میں داخلے سے قبل اسکواڈ میں شامل ہر رکن کا ایک کورونا ٹیسٹ لیا جائے گا، ٹیسٹ کی رپورٹ منفی آنے کی صورت میں اسے کیمپ میں داخلے کی اجازت مل جائے گی۔ کیمپ میں رپورٹ کرتے ہی ان کا دوسرا کورونا ٹیسٹ بھی لے لیا جائے گا۔

ممکنہ کھلاڑی( 18 رکنی حتمی اسکواڈ کا اعلان 31 دسمبر کو کیا جائے گا)ممکنہ کھلاڑیوں میں ایمن انور ، عالیہ ریاض ، انعم امین ، عائشہ نسیم ، عائشہ ظفر ، بسمہ معروف ، ڈیانا بیگ ، فاطمہ ثنا ءخان ، ارم جاوید ، جویریہ خان ، جویریہ رؤف ، کائنات امتیاز ، کائنات حفیظ ، ماہم طارق ، منیبہ علی ،ناہیدہ خان، نجیہ علوی ، نشرہ سندھو ، نتالیہ پرویز ، نڈا ڈار ، عمیمہ سہیل ، رامین شمیم ، صبا ءنذیر ، سعدیہ اقبال ، سدرہ امین ، سدرہ نواز اور سیدہ عروب شاہ شامل ہیں۔

دورہ جنوبی افریقہ قومی خواتین کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ ڈیوڈ ہیمپ اور باؤلنگ کوچ ارشد خان کی پہلی اسائنمنٹ ہوگی، دونوں کوچز نے بالترتیب اکتوبر اور نومبر میں پاکستان خواتین کرکٹ ٹیم کو جوائن کیا تھا، کامران حسین کیمپ میں اسسٹنٹ کوچ کی ذمہ داریاں نبھائیں گے۔قومی خواتین کرکٹ ٹیم نے اس سے قبل مئی 2019 میں جنوبی افریقہ کا دورہ کیا تھا۔دونوں ممالک کے مابین کھیلی جانے ایک روزہ انٹرنیشنل سیریز 1-1 سے ڈرا ہوگئی تھی جب کہ ٹی ٹونٹی سیریز میں سنسنی خیز مقابلے کے بعد میزبان ٹیم نے 2-3 سے برتری حاصل کی تھی۔

چیف سلیکٹر قومی خواتین کرکٹ ٹیم عروج ممتاز کا کہنا ہے کہ کوویڈ19 کی وباء کے دوران ہم خواتین کرکٹ پر زیادہ سے زیادہ سرمایہ کاری کرنا چاہتے ہیں تاکہ ملک میں خواتین کرکٹ کو فروغ ملے۔ انہوں نے کہا کہ وہ جنوبی افریقہ کرکٹ کی مشکور ہیں کہ انہوں نے آئی سی سی ویمنز ورلڈ کپ 2022 میں کوالیفائی کرنے کے باوجود ہمارے ساتھ مکمل سیریز کھیلنے پر رضامندی کا اظہار کیا ہے۔

عروج ممتاز نے کہا کہ کوویڈ 19 کے باوجود خواتین کھلاڑیوں کی توجہ کھیل پر مرکوز رکھنے کی وجہ سے پی سی بی نے مختلف ڈومیسٹک ٹورنامنٹس منعقد کروائے تاہم انٹرنیشنل کرکٹ کا کوئی نعمل البدل نہیں ہیں۔