ویرات کوہلی کے سیریز چھوڑنے کے فیصلے پر آسٹریلوی براڈ کاسٹرز کی نیندیں حرام

بھارتی کپتان ویرات کوہلی کی جانب سے بچے کی پیدائش کے سبب پہلے ٹیسٹ کے بعد دورہ آسٹریلیا چھوڑنے کا فیصلہ آسٹریلیوی براڈ کاسٹرز کو ایک آنکھ نہ بھایا، میزبان براڈ کاسٹرز نے کرکٹ آسٹریلیا کو آڑے ہاتھوں لے لیا ۔ آسٹریلوی نشریاتی ادارے چینل 7 کا کہنا تھا کہ دنیا کے بہترین بلے باز کے ٹیسٹ سیریز کے لیے نہ ہونے سے کرکٹ آسٹریلیا کے ساتھ ان کی ملین ڈالر سپانسر شپ کو بڑا دھچکا لگا ہے اور براڈ کاسٹرز اب کٹوتی کرنے کے مجاز ہوں گے کیوں کہ ویرات کوہلی کے نہ ہونے سے میچز دیکھنے والوں کی تعداد میں نمایاں کمی متوقع ہے۔یاد رہے کہ ویرات کوہلی نے جنوری میں اپنے پہلے بچے کی پیدائش کے سبب پہلا ٹیسٹ کھیل کر وطن واپس آنے کا فیصلہ کرلیا ہے اور کرونا پابندیوں کے باعث ان کا واپس آسٹریلیا جانا بھی بہت مشکل ہوگا۔

آسٹریلیا اور بھارت کے مابین سیریز میں 4 ٹیسٹ، 3 ون ڈے اور تین ٹی ٹونٹی میچز کھیلے جائیںگے۔ شیڈول کے مطابق سیریز کے پہلے دو ون ڈے میچز 27 اور 29 نومبر کو سڈنی میں ہوں گے جب کہ تیسرا ون ڈے 2 دسمبر کو کینبرا میں کھیلا جائیگا۔اعلان کردہ شیڈول کے مطابق ٹی ٹونٹی میچز 4, 6 اور 8 دسمبر کو کھیلے جائیں گے۔ سیریز کا پہلا ڈے نائٹ ٹیسٹ 17 دسمبر سے ایڈیلیڈ میں شروع ہوگا، دوسرا ٹیسٹ 26 دسمبر، تیسرا ٹیسٹ 7 جنوری اور چوتھا ٹیسٹ 15 جنوری سے شروع ہوگا۔ کرکٹ آسٹریلیا کے مطابق میچز اور سفری پلان حکومتی ہدایات اور پابندیوں سے مشروط ہے۔ 26 دسمبر کو ہونے والے ٹیسٹ میچ میں 25 ہزار شائقین کو میلبورن کرکٹ گراﺅنڈ میں آنے کی اجازت ہوگی۔ دوسری جانب سڈنی کرکٹ گراﺅنڈ میں 23 ہزار شائقین کو داخلے کی اجازت مل گئی جب کہ برسبین میں 30 ہزار اور ایڈیلیڈ اوول میں 27 ہزار شائقین آ سکیں گے۔