friend daughter sucking sideways big rod.videos porno
desi porn
pornoxxx

ابرار الحق کے گانے سے متعلق بھارتی میوزک کمپنی کا مؤقف سامنے آگیا

بھارت کی معروف میوزک کمپنی’T-Series’ کا پاکستانی گلوکار ابرار الحق کا گانا نچ پنجابن کرن جوہر کی نئی فلم جگ جگ جیو میں استعمال کرنے کے حوالے سے بیان سامنے آگیا ہے۔

بالی وڈ کے معروف ہدایتکار کے پروڈکشن ہاؤس دھرما نے اتوار کو اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹ پر فلم، جگ جگ جیو کا ٹریلر ریلیز کیا جس میں ابرارالحق کا 2002 میں ریلیز ہونے والا مشہور گانا نچ پنجابن مبینہ طور پر استعمال کیا گیا۔

بعد ازاں پاکستانی گلوکار ابرار الحق نے بالی وڈ کے مشہور ہدایتکار کرن جوہر اور ان کے پروٖڈکشن ہاؤس دھرما پر ان کی اجازت کے بغیر ماضی کا گانا ‘نچ پنجابن’ اپنی نئی فلم جگ جگ جیو میں چوری کرنے کا الزام لگایا۔

ابرارالحق نے ٹوئٹر پر بیان جاری کرتے ہوئے کہاکہ’میں نے اپنا گانا ’نچ پنجابن‘ کسی بھارتی فلم کو نہیں بیچا اور اس کے ہرجانے کے دعوے کے لیے میں عدالت جانے کا حق رکھتا ہوں’

تاہم اب T-Series نے اپنے سوشل میڈیا پر ایک بیان جاری کیا اور ابرارالحق کے دعووں کو مسترد کرتے ہوئے یقین دہانی کرائی ہے کہ T-Series نے 1 جنوری 2002 کو آئی ٹیونز پر ریلیز ہونے والے گانے نچ پنجابن کے حقوق قانونی طور پر حاصل کیے ہیں اور یہ لالی وڈ کلاسکس کے یوٹیوب چینل پر بھی دستیاب ہے جو کہ پنجابی گانوں کو محفوظ کرنے والی کمپنی 1Moviebox کی ملکیت ہے۔

تاہم اس سے قبل 1Moviebox نے بھی اپنا بیان جاری کیا تھا کہ نچ پنجابن کو TSeries کی طرف سے فلم جگ جگ جیو میں شامل کرنے کے لیے باضابطہ طور پر لائسنس دیا گیا ہے۔کرن جوہر اور دھرما موویز کو اس گانے کو اپنی فلم میں استعمال کرنے کا قانونی حق حاصل ہے اور ابرارالحق کی جانب سے کی گئی ٹوئٹ توہین آمیز اور مکمل طور پر ناقابل قبول ہے۔

دوسری جانب ابرارالحق نے دوبارہ ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا کہ ‘گانے ’نچ پنجابن‘ کا لائسنس کسی کو نہیں دیا گیا۔ اگر کوئی دعویٰ کر رہا ہے تو معاہدہ پیش کریں ورنہ میں قانونی کارروائی کروں گا’۔

واضح رہے کہ کرن جوہر کے پروڈکشن ہاؤس کے بینر تلے بننے والی فلم جگ جگ جیو میں ورن دھون،انیل کپور، کائرہ ادواری اور نیتو سنگھ اداکاری کرتے نظر آئیں گے۔

spanish flamenca dancer rides black cock.sex aunty
https://www.motphim.cc/
prmovies teen dildo wet blonde stunner does it on the hood of car.