نورا فتیحی نے ڈانسر کی نامناسب حرکت پر خاموشی توڑ دی

مراکشی نژاد کینڈین ڈانسر نورا فتیحی نے بھارتی ڈانسر و کوریوگرافر ٹیرنس لیوس کی جانب سے ریئلٹی شو کے دوران نامناسب حرکت کرنے پر خاموشی توڑتے ہوئے واقعے کی وضاحت کردی۔

ڈانس انڈیا ڈانس شو کے دوران ایک موقع پر نورا فتیحی اور ٹیرس لیوس ایک ساتھ سامعین کا شکریہ ادا کرتے ہیں، جس دوران مرد ڈانسر عرب خاتون ڈانسر کے جسم پر بظاہر غیر ارادی طور پر نامناسب طریقے سے ہاتھ پھیرتے ہیں۔

ڈانسر و کوریوگرافر ٹیرس لیوس نے نورا فتیحی کے ساتھ مذکورہ پروگرام کی تصویر بھی شیئر کی، جس میں وہ عرب ڈانسر کو بانہوں میں لیے دکھائی دے رہے ہیں۔

مذکورہ تصویر شیئر کیے جانے اور ویڈیو وائرل ہونے پر بھارتی افراد نے ٹیرس لیوس پر نورا فتیحی کا جنسی استحصال کرنے کا الزام لگایا۔

زیادہ تر افراد نے ٹیرس لیوس اور نورا فتیحی کی ویڈیو کلپ کو سوشل میڈیا پر شیئر کرتے ہوئے ٹیرس لیوس پر خوب تنقید کی۔