سلمان خان کی آواز بننے والے گلوکار ایس پی بالا کی آخری رسومات ادا

یک ہی دن میں سب سے زیادہ کلام گانے کا عالمی ریکارڈ اپنے پاس رکھنے والے بھارت کے معروف گلوکار و موسیقار 74 سالہ شریپتی پنڈترادھیول بالسوبرامنیم المعروف ایس پی بالا کی آخری رسومات ادا کردی گئیں۔

ایس پی بالا دو دن قبل کورونا سمیت دیگر بیماریوں کے باعث 25 ستمبر کی دوپہر کو چل بسے تھے۔

گلوکار کو رواں برس اگست کے آغاز میں کورونا کے باعث ریاست تامل ناڈو کے دارالحکومت چنئی کے نجی ہسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔

ایس پی بالا میں اگست کے وسط تک کورونا کی علامتیں شدید ہوگئی تھیں اور زائد العمری کے باعث ان پر دیگر بیماریوں نے بھی حملہ کردیا تھا۔

تحریر جاری ہے‎

چنئی کے مطابق ایس پی بالا کو ستمبر کے آغاز میں ہی نمونیہ بخار بھی ہوگیا تھا اور آخری ایام میں ان کے کچھ جسمانی اعضا نے درست انداز میں کام کرنے چھوڑ دیا تھا جب کہ ان کی موت دل کے رک جانے کی وجہ سے ہوئی۔

ایس پی بالا کی موت پر بولی وڈ سمیت دنیا بھر کی میوزک و شوبز شخصیات نے گہرے دکھ کا اظہار کیا تھا اور ان کے مداح بھارت بھر میں ہونے کی وجہ سے ان کی آخری رسومات کو 2 دن بعد 27 ستمبر کی دوپہر کو ادا کیا گیا۔

بھارتی اخبار انڈین ایکسپریس نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ ایس پی بالا کی آخری رسومات ان کے آبائی گاؤں میں ضلع تیرو والور میں ان کے فارم ہاؤس پر ادا کی گئیں۔

اے این آئی کے مطابق ایس پی بالا کو آخری رسومات کے دوران سلامی بھی دی گئی، تامل پولیس نے ان کی آخری رسومات کے دوران 72 گولیاں چلائیں اور ان کی آخری رسومات میں درجنوں اہم شخصیات نے شرکت کی۔

ایس پی بالا کا آبائی گاؤں چنئی سے 50 کلو میٹر دوری پر واقع ہے اور ان کا تعلق آرتھوڈوکس تیلگو براہمن خاندان سے تھا۔

ایس پی بالا ماضی کی نوابی ریاست مدراس میں پیدا ہوئے، اس لیے انہیں کیریئر کے آغاز میں مدراسی بھی کہا جاتا تھا اور انہیں ان کی زبان اور علاقے کی وجہ سے تضحیک کا سامنا بھی کرنا پڑا۔

ایس پی بالا نے گلوکاری کی باقاعدہ تربیت و تعلیم حاصل نہیں کی تھی اور نہ ہی انہوں نے گلوکاری شروع کرنے کے بعد کبھی میوزک کی تعلیم حاصل کرنے کی کوشش کی۔

ایس پی بالا نے کئی ایوارڈز جیت رکھے تھے—فائل فوٹو: اے ایف پی
ایس پی بالا نے گلوکاری کا آغاز تامل زبان سے 1960 کے بعد کیا اور جلد ہی وہ تامل زبان کے معروف گلوکار بن گئے اور پھر ان کی شہرت اتنی بڑھ گئی کہ انہیں دیگر مقامی زبانوں میں بھی گلوکاری کرنے کی پیش کش ہوئی۔

ایس پی بالا کی شہرت 1980 سے قبل ہی اتنی بڑھ گئی تھی کہ ان کے چرچے بولی وڈ میں ہونے لگے تھے اور پھر انہیں بولی وڈ اور بھارتی فلم انڈسٹری کے بڑے اداکاروں پر فلمائے گئے گانوں کی پیش کش ہونے لگیں۔