تنقید پر بشریٰ انصاری آپے سے باہر، نازیبا الفاظ لکھ کر کمنٹ ڈیلیٹ کردیا

پاکستان کی معروف اداکارہ بشریٰ انصاری سوشل میڈیا پر اماں نام سے مقبول لبنی فریاد کی تنقید پر بھڑک اٹھیں۔

لبنی فریاد نے ایک وی لاگ میں بشری انصاری کے ڈرامے ’زیبائش‘ میں اداکاروں کی اداکاری کا تمسخر اڑایا جس پر بشری انصاری سیخ پا ہوگئیں۔

ڈرامہ سیریل ’زیبائش‘ بشری انصاری کی تحریر کردہ کہانی ہے جس میں ان سمیت ان کی بھانجی زارا نور، داماد اسد صدیقی اور ان کی بہن اسما عباسی اداکاری کے جوہر دکھا رہے ہیں جس کو ناظرین پہلے ہی بشری انصاری کا ’فیملی ڈرامہ‘ قرار دے چکے ہیں۔

حال ہی میں اس ڈرامے کی ایک قسط میں والد کے انتقال کے سین میں زارا عباسی نے ایسی چیخیں ماری جس پر سوشل میڈیا پر متعدد میمز بنے۔

یہ سین وائرل ہونے کے بعد لبنی فریاد نے ایک وی لاگ میں زارا عباسی کے چیخیں مارنے والے انداز کی نقل اتاری اور حال میں چلنے والے پاکستانی ڈراموں پر تنقید بھی کی۔

اس پر بشری انصاری سیخ پا ہوگئیں اور کمنٹ میں سخت ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے چند نازیبا الفاظ بھی استعمال کیے۔

انہوں نے لکھا کہ ہمارے ڈراموں کے لیے کیسا برا وقت آگیا ہے، چھوٹی سوچ کے افراد فنکاروں کی سخت محنت اور تخلیقی کام کے بارے میں فضول باتیں کرنے لگے ہیں۔ اس شعبے کے لیے ان کا معیار کیا ؟ میں سمجھ نہیں سکی، آخر لوگ ایسے پینڈو انداز کے شو کیوں دیکھتے ہیں، لوگوں کی عزت اچھالنا گناہ ہے’۔

کمنٹ اسکرین گریب—
انہوں نے مزید کہا ‘یہ ایک گھٹیا کمنٹری ہے، اگر آپ کو کوئی ڈرامہ پسند نہیں تو اسے مت دیکھیں، کسی کی سخت محنت پر گٹر جیسی بات مت کریں، درحقیقت جب لوگوں کے پاس کچھ کرنے کو نہیں ہوتا تو وہ ان سے حسد کرنے لگتے ہیں جو کچھ کررہے ہوتے ہیں، جہالت ان کے چہروں پر واضح ہے، اللہ عقل دے اور باعزت روزی نصیب کرے، لوگوں کے مستقبل کو تباہ کرکے آمدنی کمانا حرام ہے، یہ ہماری زندگیوں کے کورونا ہیں، اللہ ان کا خاتمہ کرے گا، انشاء اللہ’۔

بشریٰ انصاری کے اس کمنٹ پر متعدد صارفین نے ان پر ہی تنقید کی بوچھار کر ڈالی۔

اس کے بعد بشری انصاری نے اپنا کمنٹ ڈیلیٹ کردیا لیکن تب تک ان کے کمنٹ کے اسکرین شاٹ سوشل میڈیا پر وائرل ہوچکے تھے۔

بعدازاں اسی پوسٹ کو شیئر کرتے ہوئے لبنی فریاد نے ‘افسوس بہت افسوس‘ لکھا۔

سوشل میڈیا پر بشری انصاری کے نام کا ہیش ٹیگ بھی سرفہرست ٹرینڈ بن گیا ہے۔