friend daughter sucking sideways big rod.videos porno
desi porn
pornoxxx

پنجاب میں 17 سال کی لڑکی کو بگڑے رئیس زادوں نے گن پوائنٹ پر اغوا کر کے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا۔

اوکاڑہ: پنجاب کے شہر اوکاڑہ کے ایک نواحی گاؤں 33 فور ایل میں محنت کش باقر کی 17 سالہ بیٹی آمنہ بی بی کو بگڑے رئیس زادوں نے گن پوائنٹ پر اغوا کے بعد 3 روز تک اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا۔

اوکاڑہ کے شاہبھور پولیس اسٹیشن کی حدود میں ایک محنت کش باقر کی جوان بیٹی کو مقامی بگڑے رئیس زادوں نے اغوا کر کے زندگی برباد کر دی۔

ملزمان نے لڑکی کو تین دن تک زیادتی کا نشانہ بنایا، اور پھر چھوڑ دیا، تاہم اس کے بعد لڑکی کے والد کو بلیک میل کر کے رقم بھی وصول کرتے رہے، معلوم ہوا کہ ملزمان نے لڑکی کی نازیبا ویڈیوز اور تصاویر بھی بنا لی تھیں، جن کے ذریعے غریب گھرانے کو بلیک میل کیا جاتا رہا۔

ضرور پڑھیں: کراچی: گھر سے بھاگی 17 سالہ لڑکی کی لاش پپری کے نالے سے برآمد

محنت کش باقر نے پولیس کو بتایا کہ ان سے ایک لاکھ روپے لیے جا چکے ہیں اور مزید 4 لاکھ روپوں کا تقاضا کیا جا رہا ہے، پولیس نے واقعے کا مقدمہ درج کر لیا، تاہم واقعے میں ملوث با اثر ملزمان کے دباؤ پر اعلیٰ افسران کی جانب سے تفتیش کو تبدیل کر دیا گیا۔

متاثرہ لڑکی کی والدہ نے ایک ویڈیو میں الزام لگایا کہ ان کی بیٹی کو منظور اور رضوان نے گن پوائنٹ پر اس وقت اغوا کیا جب وہ انھیں کھیتوں میں کھانا پہنچانے آ رہی تھی۔

ضرور پڑھیں: خون کے آنسو رونے والی لڑکی کا ڈرامہ بے نقاب

متاثرہ خاندان نے انصاف کے لیے وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

اس کیس کا ایک اور افسوس ناک پہلو یہ ہے کہ بلیک میلنگ کے پیسے نہ دے پانے پر ملزمان نے لڑکی کی برہنہ ویڈیوز اور تصاویر لڑکی کے شوہر کو دکھا دیں، جس پر لڑکی کو شادی کے روز ہی طلاق ہو گئی۔ ملزمان نے لڑکی کے والد سے کہا تھا کہ وہ پانچ لاکھ روپے دے دے تو وہ ویڈیوز اور تصاویر ڈیلیٹ کر دیں گے۔

spanish flamenca dancer rides black cock.sex aunty
https://www.motphim.cc/
prmovies teen dildo wet blonde stunner does it on the hood of car.