کراچی یکجہتی ریلی: شہر سے تقسیم کی سیاست کا خاتمہ کردیں گے، نثار کھوڑو

کراچی میں پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے تحت ’کراچی یکجہتی‘ ریلی میں پارٹی رہنماؤں نے کراچی شہر سے تقسیم کی سیاست کے خاتمے کا اعادہ کیا۔

پیپلز پارٹی سندھ کےصدر نثار کھوڑو اور وزیر تعلیم سعید غنی کی قیادت میں عائشہ منزل سے ایمپریس مارکیٹ تک ’کراچی یکجہتی‘ ریلی نکالی گئی۔

ریلی سے نثار کھوڑو، سعید غنی سمیت متعدد رہنماؤں نے خطاب کیے جبکہ جیالوں کی بڑی تعداد نے ریلی میں شرکت کی۔‎

اس موقع پر پیپلز پارٹی کے رہنما نثار کھوڑو نے کہا کہ کراچی پر قبضے کی خواہش کرنے والے خواب دیکھنا چھوڑ دیں کیونکہ نفرت کی سیاست کرنے والوں نے 3 نسلیں تباہ کردی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اہل شہر نے نفرت کرنے والوں کو نظر انداز کیا ہے اور اب کراچی والے پارٹی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کو ووٹ دیں تو وہ کراچی کو بدل دیں گے۔

نثار کھوڑو نے کہا کہ سندھ پر کوئی بری نظر ڈالتا ہے تو لوگ اس کو مسترد کرتے ہیں۔

رہنما پیپلز پارٹی نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے بدلے کی سیاست کے بجائے کراچی میں امن کا بیڑا اٹھایا اور پی پی پی نے کراچی میں امن بحال کیا۔

انہوں نے کہا کہ کراچی میں دہشت گردی کے خاتمے کے بعد اب ہر ایک کراچی کے مینڈیٹ کو ہائی جیک کرنا چاہتا ہے۔

پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما نے دعوی کیا کہ "کراچی کو بہت عرصہ تک لندن سے چلانے کے بعد اب شہر کو بنی گالہ سے چلانے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔

صوبائی وزیر تعلیم سیعد غنی نے کہا کہ ’آج کی یکجہتی ریلی میں تمام زبانیں بولنے والے شریک ہیں جس سے ثابت ہوگیا کہ پیپلز پارٹی کراچی کے عوام کو تقسیم کرنے کے خلاف ہے‘۔

انہوں نے واضح کیا کہ یہ ریلی کسی پارٹی کے خلاف نہیں ہے بلکہ یہ نفرت کی سیاست اور وزیر اعظم عمران خان کے بیان کے خلاف ہے جنہوں نے یہ کہا تھا کہ ’اندرون سندھ کے لوگ ‘ کراچی پر حکمرانی کررہے ہیں۔

سعید غنی نے الزام لگایا کہ تحریک انصاف ایک ’نئی ایم کیو ایم ‘ کے طور پر ابھری ہے لیکن عوام مزید نفرت، نسل اور تفرقہ بازی کو برداشت نہیں کریں گے۔

علاوہ ازیں کرونا وائرس کے پیش نظر ریلی کے شرکا میں ڈاکٹرز فورم کی جانب سے فیس ماسک بھی تقسیم کیے گئے۔