ڈاکٹر قدیر نے قلیل مدت میں ایٹمی پلانٹ لگاکر کیسے دنیا کو حیران کیا؟

ممتاز ایٹمی سائنسدان ڈاکٹر عبدالقدیر خان نے ایٹمی پلانٹ لگاکر دنیا کو حیران کردیا تھا۔ مرحوم ڈاکٹر عبدالقدیر خان نے 31مئی 1976ء کو اس وقت کے وزیراعظم ذوالفقار علی بھٹو کی دعوت پر انجینئرنگ ریسرچ لیبارٹریز میں پاکستان کو ایٹمی طاقت بنانے پر کام شروع کیا اور 1984ء میں اٹامک ڈیوائس بنانے میں کامیاب ہوئے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق صدر ضیاء الحق نے ریسرچ سینٹر کا نام تبدیل کرکے ڈاکٹر اے کیو خان ریسرچ سینٹر کردیا تھا۔
محسن پاکستان نے 8 سال کی قلیل مدت میں ایٹمی پلانٹ نصب کرکے ساری دنیا کو حیرت زدہ کردیا تھا اور دنیا کی حیرت میں مزید اضافہ اس وقت ہوا جب 1998ء میں بلوچستان کے شہر چاغی میں کامیاب ایٹمی تجربات کیے۔

پاکستان میں یورینیم کی افزودگی میں نمایاں مقام رکھنے والے اے کیو خان ریسرچ سینٹر نے ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی زیر نگرانی غوری میزائل سمیت کئی چھوٹے بڑے جنگی آلات سے پاک فوج کو لیس کیا۔