بلوچستان: ہرنائی اور گرد و نواح میں آفٹرشاکس کا سلسلہ جاری

بلوچستان کے ضلع ہرنائی اور گرد و نواح میں آفٹر شاکس کا سلسلہ جاری ہے۔ آفٹر شاکس کے باعث ضلع بھر کے سرکاری و نجی تعلیمی ادارے مزید 2 ہفتے کے لیے بند کر دیے گئے ہیں جب کہ زلزلے کے 3 روز گزر جانے کے باوجود متعدد متاثرین اب بھی حکومتی امداد کے منتظر ہیں۔

وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے سیاسی روابط شہباز گل نے بتایا کہ وزیراعظم نے زلزلہ متاثرین کے لیے 12000 روپے فی خاندان کا اعلان کیا ہے، تاہم وزیراعظم کی اعلان کردہ فی گھرانہ 12 ہزار روپے کی امداد اگلے 10 روز میں جاری ہو گی۔ نقصانات کے جائزے کے بعد اضافی امداد بھی جلد جاری کی جائے گی۔

واضح رہے کہ ہرنائی میں زلزلہ متاثرین میں امدادی اشیاء کی تقسیم کا کام جاری ہے، متاثرہ علاقوں غریب آباد، جلال آباد، کلی شور، کلی وزیر، اسلام آباد اور اس سے ملحقہ علاقوں میں زلزلے سے متاثرہ ا فر اد میں امدادی اشیاء، ٹینٹ، کمبل اور مچھر دانیوں کی فراہمی کر دی گئی ہے۔