ہم سب عورتیں کدھر جائیں، ہم سب کو کھڑ اکر شوٹ کر دیں، طاہرہ عبد اللہ

موٹروے کیس کو مس ہینڈل کیا گیا، سی سی پی او نے جو عجیب و غریب باتیں کی ہیں، جواب کیسز 48گھنٹوں میں سامنے آئے ہیں وہ اکثر گھروں میں ہوئے ہیں
سی سی پی او نے عجیب و غریب معافی مانگی ہے یہ ناقابل قبول ہے ، یہ معافی ناکافی ہے ، اس سی سی پی او کو نوکری سے برطرف کیا جائے صرف یہ ہی حل ہے،سچی بات میں گفتگو
اسلام آباد(روزنیوزرپورٹ)سماجی کارکن طاہرعبد اللہ نے روزنیوز کے پروگرام ” سچی بات ” میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ موٹروے کیس کے بہت سارے پہلو ہیں، اس گینگ ریپ کے بعد اتنے زیادہ کیس سامنے آئے کہ آپ لرز جائیں ، روز نیوز کے پروگرام سچی بات میں گفتگو کرتے ہو ئے کہا کہ یہ کیسز پورے پاکستان سے آئے ہیں، موٹروے کیس کو مس ہینڈل کیا گیا، سی سی پی او نے جو عجیب و غریب باتیں کی ہیں، جواب کیسز 48گھنٹوں میں سامنے آئے ہیں وہ اکثر گھروں میں ہوئے ہیں، کون شخص جو اپنے آپ کو انسان کہتا ہے وہمتاثر ہ خاتون پر کس طرح الزام لگایا ، ہم سب عورتیں کدھر جائیں، ہم عورتوں کو کھڑ اکر شوٹ کر دیں ، 2016میں گزشتہ حکومت نے اس حوالے سے قانون سازی کی تھی غیرت کے قتل پر بھی قانون بنا، 2010کی زیادتی م کے حولے سے قوانین بنائے گئے ہیں، سی سی پی او نے عجیب و غریب معافی مانگی ہے یہ ناقابل قبول ہے ، یہ معافی ناکافی ہے ، اس سی سی پی او کو نوکری سے برطرف کیا جائے صرف یہ ہی حل ہے ۔