زرداری کی ویڈیو لنک پر فردجرم عائد کرنے کی درخواست مسترد، ذاتی حیثیت میں پیش ہونے کا حکم

احتساب عدالت نے 8 ارب روپے کی مشکوک ٹرانزیکشن سے متعلق کیس میں سابق صدر آصف علی زرداری کی ویڈیو لنک پر فرد جرم عائد کرنے کی درخواست مسترد کر دی۔ احتساب عدالت کے جج اصغر علی نے آصف علی زرداری کے خلاف نیب کی جانب سے دائر 8 ارب روپے کی مشکوک ٹرانزیکشن سے متعلق ریفرنس پر سماعت کی۔ سابق صدر آصف علی زرداری عدالت پیش نہ ہوئے اور ان کی نمائندگی فاروق ایچ نائیک نے کی جبکہ نیب کی جانب سے پراسیکیوٹر وسیم جاوید عدالت میں پیش ہوئے۔

آصف زرداری کے وکیل نے کہا کہ طبی وجوہات کے باعث ان کے مؤکل عدالت میں پیش نہیں ہو سکتے لہذا عدالت ویڈیو لنک کے ذریعے فرد جرم عائد کرے۔ احتساب عدالت نے آصف زرداری کی ویڈیو لنک کے ذریعے فرد جرم عائد کرنے کی استدعا مسترد کرتے ہوئے انہیں 14 اکتوبر کو ذاتی حیثیت میں پیش ہونے کا حکم دیا اور کہا کہ آئندہ سماعت پر ملزم پیش نہ ہوا تو وارنٹ گرفتاری جاری کریں گے۔

عدالت نے سابق صدر آصف علی زرداری پر فرد جرم کے لیے 14 اکتوبر کی نئی تاریخ مقرر کرتے ہوئے کیس کی سماعت ملتوی کر دی۔