لیز مکانات توڑنے پر سندھ ہائی کورٹ نے کمشنر کراچی سے جواب طلب کرلیا

کراچی : ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔سندھ ہائی کورٹ نے محمود آباد نالہ آپریشن میں لیز مکانات توڑنے کے معاملے پر چیف سیکریٹری، میونسپل کمشنر، کمشنر کراچی سے جواب طلب کرلیا۔تفصیلات کے مطابق سندھ ہائی کورٹ میں محمود آباد نالے پر قائم تجاوزات گرانے کے خلاف آپریشن کے نام پر لیز مکانات توڑنے کے کیس پر سماعت ہوئی، جس میں عدالت نے سینئر ڈائریکٹر لینڈ اینٹی انکروچمنٹ اور کے ایم سی حکام سے وضاحت طلب کرلی۔عدالت نے چیف سیکریٹری، میونسپل کمشنر اور کمشنر کراچی سے بھی جواب طلب کیا ہے، جس پر کے ایم سی کے وکیل نے ایک بار پھر مہلت مانگ لی۔

درخواست گزار نے عدالت میں کہا کہ سپریم کورٹ نے غیر قانونی تجاوزات گرانے کا حکم دیا ہے لیکن متعلقہ حکام غیر قانونی تعمیرات کے بجائے لیز مکانات گرا رہے ہیں۔درخواست گزار نے کہا کہ عدالت نے بھی ہمارے مؤقف و تسلیم کیا مگر عمل نہیں ہورہا اور متعلقہ ادارے لینڈ مافیا سے ملکر لیز مکانات توڑ رہے ہیں، لیز مکانات کو گرانے سے روکا جائے۔