درجنوں افغان فنکاروں کی پناہ کے لیے پاکستان آمد

اسلام آباد۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔افغانستان میں طالبان کی حکومت کے قیام کے بعد درجنوں افغان فنکار اپنا وطن چھوڑ کر پاکستان کے مختلف شہروں میں پہنچ گئے ہیں۔ صوبہ خیبر پختونخوا میں اب تک پچاس سے زیادہ افغان خاندان پہنچ چکے ہیں۔ اکثریتی فنکار سرحد پر طورخم کی گزر گاہ کے راستے پاکستان پہنچنے کے بعد اب صوبے کے مختلف شہروں میں قیام پذیر ہیں۔ان فنکاروں میں سے تقریباً سب ہی خوف کے مارے اپنی شناخت ظاہر کرنے سے گریز کر رہے ہیں۔ان فنکاروں میں سے بعض کا تعلق افغانستان کے سرکاری ریڈیو سے ہے۔

گلوکاروں کی بھی ایک بڑی تعداد پناہ کے لیے پاکستان پہنچی ہے۔ پشاور پہنچنے والے ایسے ہی ایک افغان موسیقار نے اپنی شناخت ظاہر نہ کرنے کی شرط پر ڈی ڈبلیو اردو کو بتایا، ”میں نے موسیقی پشاور میں سیکھی تھی۔

پھر جب افغانستان میں طالبان کی حکومت ختم ہوئی اور امریکا اور اس کے اتحادیوں کے تعاون سے نئی حکومت بنی، تو ہم اس نیت سے واپس افغانستان گئے تھے کہ ہماری حکومت ہمیں سہارا دے گئی اور اپنے فن کو آگے بڑھانے میں ہماری معاونت کرے گی۔لیکن ایسا بالکل نہ ہوا۔ ٹیلی وژن اور ریڈیو سے وابستہ اکثریتی فنکار، نجی محفلوں میں شرکت کر کے اپنا گھر بار چلاتے رہے۔

‘‘ان کا مزید کہنا تھا کہ طالبان نے ابھی تک کسی فنکار کو براہ راست دھمکی تو نہیں دی لیکن انہیں طالبان کا سابق دور بھی یاد ہے۔ انہیں خدشہ تھا کہ طالبان ایک بار پھر سے فنکاروں کو تنگ کریں گے۔ ”ہمیں اپنے اور اپنے اہل خانہ کی زندگیوں کو خطرہ محسوس ہوا، تو پاکستان کا رُخ کیا ہے