نہیں چاہتے پابندیاں لگائیں اور عید کا مزہ خراب ہو: اسد عمر

اسلام آباد: وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اور سربراہ نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر (این سی او سی) اسد عمر کا کہنا ہے کہ ہم نہیں چاہتے کہ عید پر پابندیاں لگائیں اور عید کا مزہ خراب ہو۔ اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اسد عمر کا کہنا تھا کہ ملک میں کورونا کیسز بڑھ رہے ہیں، بڑھتے کورونا کیسز پر آج وزیراعظم کو بریفنگ دینے جا رہے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ مکمل لاک ڈاؤن کی طرف بالکل نہیں جائیں گے، ملک گیر لاک ڈاؤن کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا لیکن اگر صورتحال خراب ہوئی تو اسمارٹ لاک ڈاؤن کی طرف جائیں گے۔ اسد عمر کا کہنا تھا کہ کورونا مزید بڑھنےکا خطرہ ہے لہٰذا تمام لوگ ایس او پیز پر عمل کریں، سماجی فاصلہ رکھیں، ماسک پہنیں اور ویکسی نیشن کروائیں۔

آزاد کشمیر الیکشن سے متعلق گفتگو کرتے ہوئے اسد عمر کا کہنا تھا کہ آزاد کشمیر میں کورونا بہت بڑھ رہاہے، ہم نے وہاں الیکشن ملتوی کروانے کی پہلی ہی تجویز دے دی تھی کیونکہ الیکشن کا ماحول شروع ہوتے ہی صورتحال کنٹرول کرنا تقریباً ناممکن ہو جاتا ہے۔ انھوں نے بتایا کہ آزاد کشمیر اسمبلی کا فیصلہ تھا کہ وہ الیکشن کروانا چاہتے ہیں لہٰذا آزاد کشمیر الیکشن کمیشن کو کہا ہے ایس او پیز پر عمل درآمد کروایا جائے۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ میری دی گئی ہدایت پر این سی او سی نے کل آزاد کشمیر الیکشن کمیشن کو خط لکھا ہے، خط کے ساتھ کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزیوں کی تصاویر بھی لگائی گئی ہیں۔ اسد عمر کے مطابق الیکشن کمیشن کو لکھے گئے خط میں کہا گیا ہے کہ مظفر آباد میں کورونا مثبت کیسز کی شرح ڈبل ڈیجٹ ہو چکی ہے،الیکشن کروانا ہے تو ایس پر عمل درآمد یقینی بنائیں اورکورونا ایس او پیز کی خلاف ورزیوں کے مرتکب امیدواروں کو نوٹس جاری کریں۔

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی کا مزید کہنا تھا کہ گلگت میں کورونا کے مثبت کیسز بڑھ گئے ہیں جس کے بعد وہاں سہولیات بڑھا رہے ہیں،گلگت بلتستان میں کورونا کیسز بڑھنے کے بعد این سی او سی کی ٹیم جائزہ لینے گئی اور آزاد کشمیر اور گلگت میں ماس ویکسی نیشن مراکز اور موبائل ویکسی نیشن ٹیمیں بھیجی گئیں۔