رنگ روڈ سکینڈل ، زمین کم فائلیں ہزاروں میں فروخت، یہ ہی اصل منی لانڈرنگ ہے ، ایس کے نیازی

اسلام آباد(روزنیوزرپورٹ)پاکستان گروپ آف نیوز پیپرز کے چیف ایڈیٹر اور روزنیوز کے چیئرمین ایس کے نیازی نے پروگرام ’’ سچی بات ‘‘ میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی ترقی کی راہ پر چل پڑا ہے ، جہانگیر ترین کے اقدامات لمحہ فکریہ ہیں ، عمران خان نے رنگ روڈ سکینڈل کے حوالے سے ایکشن لیا ، یہ سٹوری میرے انگلش اخبار ڈیلی دی پیٹریاٹ کی تھی، یہ انتہائی خطرناک خبر تھی، وزیر اعظم نے اس پر ایکشن لے کر بہت بہتر اقدام کیا، نہیں تو یہ اور بھی بڑا سکینڈل بن جاتا ، حیران کن بات یہ ہے کہ اس سکینڈل میں زمین کم اور فائلیں بہت زیادہ فروخت کر دی گئیں تھیں ، عمران خان کی نیت پر کوئی شک نہیں لیکن ان کے ارد گرد قابل افراد کی کمی ہے ، پارٹی میں مختلف ممبران اسمبلی ان کے لئے ایشو کھڑے کرتے رہتے ہیں ، اب دیکھیں چوہدری نثار بھی حلف اٹھانے جا رہے ہیں ، قانون تو اب یہ ہے آرڈیننس بھی آچکا ہے کہ جو حلف نہیں اٹھائے گا وہ ڈی سیٹ ہو جائے گا، بات یہ ہے کہ شہباز شریف بھی باہر آچکے ہیں ، کیپٹن (ر)صفدر کو بھی بے گناہ قرار دیا جا چکا ہے ، آپ رنگ روڈ کا نقشہ دیکھیں دراصل جو راولپنڈی میں ٹریفک کا دباءو تھا اس کو رنگ روڈ کے ذریعے کم کرنا تھا، سی ڈی اے زون ٹو میں 6سو فٹ روڈ ہے اس کو رنگ روڈ کے ساتھ ملا دیتے تو کیا مضائقہ تھا، ڈیڑھ سو کنال زمین اور فائلیں تیس تیس ہزار تک فروخت کر دی جاتی ہیں ، راولپنڈی میں ہزاروں فائلیں فروخت کی گئیں ، بیرون ملک لوگ بیٹھے ہوئے ہیں ، انہوں نے فائلیں خریدیں ، اوپن فائل پر کسی کا نام نہیں ہوتا کہ یہ مکان کس کے نام ہے ، پھر یہ فائل ٹرانسفر کرائی جاتی ہے تو پتہ چلتا ہے کہ اوپن فائل کے ذریعے وسیع پیمانے پر منی لانڈرنگ کی جاتی ہے ، یہ اتنا بڑا ایشو ہے ، بہت بڑی منی لانڈرنگ ہے ، اگر سو اوپن فائلیں ملک سے باہر بیچ دی ہیں تو پتہ نہیں یہ کس نے بیچی ہیں ، پیسہ باہر ہی بینکوں میں ٹرانفسر ہو جاتا ہے کوئی ثبوت نہیں ہوتا، مسئلہ ہے کہ سب سے پہلے اووسیز جو لوگ بیٹھے ہیں ان کو تحفظ ہونا چاہئے ، سرکاری زمین پر قبضہ نہیں ہونا چاہئے ، کسی کی زمین پر کسی کو قبضہ نہیں کرناچاہئے ، حالت تو یہ ہے کہ ایل او پی ہی منظور نہیں ہو پاتا ، اب آپ دیکھیں نوا سوساءٹی میں ہزاروں فائلیں بیچ دیں ، زمین ہے نہیں ،سی ڈی اے میں کوئی درست کام نہیں کرتا، اگر کوئی صحیح کام کرے تو اسے کرنے نہیں دیا جاتا، کیونکہ صحیح کام کرنے سے بہت لوگوں کے پردے فاش ہوجاتے ہیں ، جب رنگ روڈ کے حوالے سے میرے اخبار کی خبر پر وزیر اعظم نے ایکشن لیا تو بہت سی چیزیں باہر آگئیں ۔