لاڑکانہ: خاتون سے مبینہ زیادتی کے کیس میں ملزمان کا ڈی این اے میچ نہ ہوا

لاڑکانہ کے نجی اسپتال میں خاتون سے مبینہ جنسی زیادتی کیس کی ڈی این اے رپورٹ جاری کردی گئی۔

لیاقت یونیورسٹی آف میڈیکل سائنسز جامشورو نےڈی این اے رپورٹ جاری کی جس کے مطابق خاتون کا ڈی این اےنجی اسپتال کےڈاکٹر شعیب چانڈیو سمیت عملے کےتین افراد کےڈی این اے سے میچ نہیں ہوا۔

اس سے پہلے میڈیکل رپورٹ میں بھی خاتون سے زیادتی یا تشددکے شواہد نہیں ملے تھے۔ 12مارچ کو خاتون نے ڈاکٹر سمیت 4 افراد پر ٹانگ کے آپریشن کےدوران تھیٹرمیں جنسی زیادتی کا الزام عائد کیاتھا جن کےخلاف سچل تھانےمیں مقدمہ درج کیا گیا جب کہ چاروں افراد ضمانت پر رہا ہیں۔