راجن پور: منشی کے بھیس میں آئے ملزمان کی کمرہ عدالت میں اندھا دھند فائرنگ

راجن پور: ضلع ڈیرہ غازی کی مقامی عدالت میں قتل کیس کی سماعت کے دوران فائرنگ کے نتیجے میں ایک شخص جاں بحق جبکہ سات زخمی ہوگئے ہیں۔

پنجاب میں عدالتوں میں سیکیورٹی کے ناقص انتظامات کے باعث آئے روز فائرنگ کے واقعات رونما ہوتے رہتے ہیں، جس کے نتیجے میں قیمتی جانوں کا ضیاع ہورہا ہے۔

اس طرح کے واقعات کے باعث مقامی عدالتوں میں کیسز کی سماعت کرنے والے ججز حضرات سمیت سائلین اور عدالتی عملہ بھی خوف کا شکار ہونے لگا ہے۔

آج بھی عدالتی احاطے میں فائرنگ کا واقعہ رونما ہوا، فائرنگ کا یہ واقعہ راجن پور کی سیشن عدالت میں قتل کی سماعت کے دوران پیش آیا، جہاں مخالفین نے اندھا دھند فائرنگ کردی، فائرنگ اتنی شدید تھی کہ کمرہ عدالت میں موجود افراد نے لیٹ کر اپنی جان بچائی۔ملزمان کی فائرنگ کے نتیجے میں ایک شخص موقع پر ہی جاں بحق جبکہ دو وکلا سمیت سات افراد زخمی ہوئے، زخمیوں میں دو منشی اور ایک شہری بھی شامل ہے فائرنگ کے بعد ملزمان باآسانی فرار ہوگئے۔

فائرنگ کے واقعے کی اطلاع ملنے پر پولیس کی بھاری نفری سیشن کورٹ پہنچی اور جاں بحق و زخمیوں کو ڈی ایچ کیو اسپتال منتقل کیا، کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے نمٹنے کے لئے فائرنگ کے بعد ڈسٹرکٹ کورٹ کی سیکیورٹی ہائی الرٹ کردی گئی ہے اور بھاری نفری کو عدالت کے اطراف تعینات کردیا گیا ہے۔

واقعے سے متعلق مقامی پولیس کا کہنا تھا کہ ملزمان اور مقتول کے درمیان کافی عرصے سے تنازع جاری تھا، ملزمان نے کمرہ عدالت میں داخل ہونے کے لئے وکیل کے منشی بن کر آئے۔

راجن پور کی سیشن کورٹ میں فائرنگ کے واقعے اور ایک شخص کی ہلاکت پر وزیراعلیٰ پنجاب نے فوری نوٹس لیا اور آر پی او ڈیرہ غازی خان سے واقعے سے متعلق فوری اور تفصیلی رپورٹ طلب کرلی۔

دوسری جانب راجن پور پولیس نے کمرہ عدالت میں فائرنگ کرنے والے ملزم عارف کشانی کو گرفتار کرلیا ہے، پولیس کے مطابق ملزمان کو سرچ آپریشن کے دوران گرفتار کیا گیا، ملزم کے باقی ساتھیوں کی گرفتاری کے لئے سرچ آپریشن جاری ہے، ملزم کو سخت حفاظتی اقدام کے تحت تھانے منتقل کردیا گیا ہے۔