کراچی: مسلح حملے میں مدرسے کا معلم زخمی

کراچی میں منگھوپیر روڈ پر مسلح حملے میں دینی مدرسے کا معلم زخمی ہو گیا۔ کراچی سینٹرل کے علاقے ناظم آباد میں واقع دینی مدرسے کا معلم منگھوپیر روڈ پر موٹر سائیکل سوار ملزمان کی فائرنگ سے شدید زخمی ہو گیا۔

ڈی آئی جی ویسٹ زون عاصم قائمخانی کے مطابق 40 سالہ مفتی سلیم اللہ خان کو منگھوپیر روڈ پر کار میں جاتے ہوئے فائرنگ کا نشانہ بنایا گیا، انہیں فوری طور پر عباسی شہید اسپتال منتقل کیا گیا جہاں ڈاکٹرز ان کی جان بچانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں ملتان: 10 سالہ ملازمہ پر تشدد میں ملوث مالکن اور اس کے شوہر کیخلاف مقدمہ درج

پولیس کے مطابق سلیم اللہ خان ناظم آباد میں مسجد خیر العمل کے قریب مدرسے کے معلم ہیں، وہ آج صبح کار میں اہلیہ، بچوں اور دو سالیوں کے ہمراہ اورنگی ٹاؤن جا رہے تھے کہ منگھوپیر روڈ پر موٹر سائیکل پر سوار دو ملزمان نے فائرنگ کر دی، مفتی سلیم اللہ کو کمر اور پیٹ پر دو گولیاں لگیں۔

ڈی آئی جی ویسٹ زون عاصم قائمخانی کے مطابق واقعہ بظاہر ٹارگٹڈ لگتا ہے، واضح تصدیق سے نہیں کہہ سکتے کہ ذاتی دشمنی کی بنیاد پر مفتی سلیم اللہ کو نشانہ بنایا گیا یا واردات کسی اور وجہ کا شاخسانہ ہے، معاملے کی تفتیش شروع کر دی ہے۔