گیس کی کمی کا مسئلہ قدرتی ہے: سوئی سدرن کا عدالت میں جواب

کراچی: سندھ ہائیکورٹ میں صوبے میں گیس کمی کے خلاف درخواست پر سماعت میں سوئی سدرن گیس کمپنی نے جواب جمع کرادیا۔ سوئی سدرن گیس کمپنی کی جانب سے عدالت میں جمع کرائے گئے جواب میں بتایا گیا ہےکہ گیس کی کمی کا مسئلہ قدرتی ہے، سردیوں کی موسم میں پیداوار کم اور اس کا استعمال بڑھ جاتا ہے۔

سوئی سدرن کا کہنا ہےکہ کنویں سے جو گیس ملے گی اس کا ہی استعمال کریں گے، ایک ہی پائپ لائن میں ڈومیسٹک، کمرشل شاپس، صنعت اور سی این جی کنیکشنز ہیں اس لیے کسی ایک سیکشن کی گیس فراہمی بند نہیں کر سکتے۔

جسٹس امجد سہتو نے استفسار کیا کہ آپ ایل این جی کیوں نہیں منگواتے ؟ ایس ایس جی سی کے وکیل نے بتایا کہ ایل این جی کا بھی استعمال ہو رہا ہے لیکن ایل این جی کا یونٹ 3 ہزار کا ہے اور ہم اسے 200 روپےمیں صارف کو دے رہے ہیں۔ درخواست گزار کا کہنا ہے کہ سندھ 68 فیصد گیس کی پیداوار دے رہا ہے اس لیے پہلا حق سندھ کا ہے۔

عدالت ایس ایس جی سی کے جواب پر درخواست گزار سے جواب الجواب طلب کرتے ہوئے مزید سماعت 16 فروری تک ملتوی کردی۔