موجودہ نظام کو درست کرنا ہو گا،ماضی کے بجائے حال کی طرف توجہ دی جائے ، ایس کے نیازی

چیف جسٹس نے 110فیصد درست بات کی کہ کراچی میں کوئی گھر پلازہ نہیں جس میں بے قاعدگیاں نہ کی گئی ہوں ، ریکوڈک کیس جو ہارا ہے سب لاپرواہی کی وجہ سے ہوا

عمران خا ن کے ذہن میں عوامی مفاد ہے لیکن عمل پیرا نہیں ہو پایا ،اسلام آباد کے ڈومیسٹک علاقوں میں کمرشل سرگرمیاں ہو رہی ہیں ، اسلام آباد کی حالت خراب ہے

کرونا سے معیشت متاثر ہے ، سٹاک ایکسچینج کسی ملک کا فیس ہو تا ہے ، یہ اچھی جار ہی ہو تو سرمایہ کاری آتی ہے،روزنیوز کے پروگرام ’’ سچی بات ‘‘ میں گفتگو

اسلام آباد(روزنیوزرپورٹ)پاکستان گروپ آف نیوز پیپرز کے چیف ایڈیٹر اور روزنیوز کے چیئرمین ایس کے نیازی نے کہا ہے کہ میرے مطابق میں نے بتا دیا تھا اور لکھ بھی دیا تھا کہ پیپلز پارٹی استعفے نہیں دے گی، زرداری استعفے دینے کے مخالف تھے ، کیونکہ سندھ اسمبلی ، قومی اسمبلی اور سینیٹ میں ان کے نمائندے موجود تھے ، مجھے معلوم ہوا ہے تو میں انے اپنے قارئین اور ناظرین کو بتا دیاتھا، کہ پیپلز پارٹی استعفے نہیں دے گی ، سیاسی رہنماءوں کو حالات درست کرنے میں کردار ادا کرنا ہوگا ، اس وقت کرونا کے باعث حالات خراب ہیں ، چیئرمین نیب کو بھی کہا تھا کہ موجودہ حالات کو کرپشن سے بچائیں ، کرپشن میں فرق نہیں پڑا ، عمران خان کرپشن نہیں کرتے ، مگر دیگر لوگوں کو دیکھنا ہو گا، 18ویں ترمیم کے حوالے سے میں نے اقدامات اٹھائے ، ہ میں موجودہ نظام کو مضبوط بنانا ہو گا، پی اے سی کا چیئرمین اور نیب کا چیئرمین دونون دوست ہیں ، موجودہ نظام کو درست کرنا ہو گا، پھر ہم ماضی کی طرف دیکھیں ، چیف جسٹس نے 110فیصد درست بات کی کہ کراچی میں کوئی گھر پلازہ نہیں جس میں بے قاعدگیاں نہ کی گئی ہوں ، دونوں جماعتیں حکومت میں بھی آئیں ، پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم والے بھی حکومت میں ہیں ، ریکوڈک کیس جو ہار گے ہیں یہ تمام لاپرواہی کی وجہ سے ہوا، کئی کمپنیوں نے آفر کیا تھا کہ ہم کیس لڑیں گے تمام معاملات ہم پر چھوڑ دیئے جائیں ، ہم دیکھیں گے ، لیکن لاپرواہی کا مظاہرہ کیا گیا، جے یو آئی کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جو ہو رہا ہے دیکھ لیں یہ ہی پاکستان ہے ، ابھی تک دیکھتے آئے ہیں کہ عوام کے مفاد کے تحت کوئی کام نہیں کرتا ، عمران خا ن کے ذہن میں عوامی مفاد ہے لیکن عمل پیرا نہیں ہو پا رہے ، انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہ اکہ اسلام آباد کو دیکھیں کمرشل سرگرمیاں ہو رہی ہیں ، اسلام آباد کی حالت خراب ہے ، پلازے بن گئے ہیں ، ایس کے نیازی نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ اسلام آباد کی کچی آبادیوں کے بارے حکومت سوچ تو رہی ہے مگر معاملات آگے نہیں چل رہے ، انہوں نے کہا کہ اداروں میں تھرڈ پارٹی چیکنگ ہوگی تو نتاءج بہتر ہوں گے ، معاشی حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کرونا سے معیشت متاثر ہے ، سٹاک ایکسچینج کسی ملک کا فیس ہو تا ہے ، یہ اچھی جار ہی ہے تو سرمایہ کاری آئیگی ۔