سینیٹ کے انتخابات شو آف ہینڈز کے ذریعے کروانا چاہتے ہیں، شبلی فراز

وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات شبلی فراز نے کہا کہ سینیٹ کے انتخابات و شفاف بنانے کے لیے شو آف ہینڈز کے ذریعے سینیٹرز کا انتخاب کروانا چاہتے ہیں، اس کے لیے سپریم کورٹ سے رہنمائی لی جائے گی۔اسلام آباد میں کابینہ کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئےوفاقی وزیر اطلاعات و نشریات شبلی فراز نے کہا کہ سینیٹ کے انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ کے الزامات لگتے ہیں اور بات طے ہوجاتی ہے کہ خرید و فروخت ہوتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ انتخابات کی شفافیت کے لیے سپریم کورٹ نے مختصر حکم جاری کیا تھا، جس کی بنیاد پر ہم نے اسمبلی میں ایک بل پیش کیا تھا اور آج اس بحث ہوئی کہ کس طرح اس بل کو منظور کرواسکتےہیں، آئینی ترمیم، ایگزیکٹیو آرڈر یا الیکشن کمیشن کے ذریعے ہوگا۔انہوں نے کہا کہ ہم نے طے کیا کہ سپریم کورٹ سے رہنمائی لیں گے جس کے لیے ہمارا مدعا ہے کہ شو آف ہینڈز کے ذریعے انتخابات ہوں۔

شبلی فراز نے کہا کہ اس سے پہلے کسی حکومت نے اس طرف توجہ نہیں کیا حالانکہ حکومت کے پاس وسائل ہوتے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ ہم چاہتے ہیں کہ سینیٹ کے انتخابات شفاف اور مصدقہ ہوں تاکہ اس میں وہی لوگ آئیں جو مختلف پارٹیوں سے تعلق رکھتے ہوں۔انہوں نے کہا کہ ہمیں امید ہے کہ سینیٹ کے انتخابات سے بہت پہلے سپریم کورٹ سے رہنمائی ملے گی۔