کراچی میں تخریب کاری کی کوشش ناکام، بلاول چورنگی پر گاڑی سے بم برآمد

کراچی: بم ڈسپوزل اسکواڈ نے بلاول چورنگی پر ملنے والا بم ناکارہ بنادیا۔ ایس ایس پی ساؤتھ شیراز نذیر کے مطابق مشکوک موٹرسائیکل کے ذریعے بم کی اطلاع ون فائیو مددگار پر دی گئی تھی جس پر پولیس اور بی ڈی ایس کی ٹیم موقع پر پہنچی اور 200 میٹر کے علاقے کو گھیرے میں لے کر اسے شہریوں سے خالی کرالیا گیا۔

ایس ایس پی نے بتایا کہ بم ڈبل کیبن گاڑی میں نصب کیا گیا تھا اور گاڑی بلاول ہاؤس کے سامنے بینک پر کھڑی تھی جب کہ یہ گاڑی چینی ریسٹورینٹ کے عملے کی ہے۔ ایس ایس پی کے مطابق بم ڈسپوزل اسکواڈ کے عملے نے موقع پر پہنچ کر بم کو ناکارہ بنادیا۔ پولیس کا کہنا ہےکہ چلتی ہوئی گاڑی میں میگنیٹک بم چپکایا گیا تھا جب کہ گاڑی میں غیر ملکی تھے جنہیں محفوظ مقام پر منتقل کردیا گیا ہے جن سے تفتیش کی جارہی ہے۔

ایس ایس پی نے بتایاکہ بی ڈی ایس کی حتمی رپورٹ کے بعد تفصیلات بتا سکیں گے جب کہ ممکنہ طور پر ڈیوائس دھماکے کے لیے ہی لگائی گئی تھی، گاڑی کلفٹن کے ایک ریسٹورنٹ کی ملکیت تھی اورگاڑی میں سوار افراد یسٹورینٹ کے ملازمین تھے۔ دوسری جانب ذرائع کا کہنا ہےکہ ڈیوائس کے ساتھ ایک کلوگرام کے برابربارودی مواد تھا، ملزمان نے دور جاکر ریموٹ سے بم پھاڑنے کی کوشش کی، بم کے ساتھ منسلک ڈیٹونیٹر پھٹ گیا مگر ڈیوائس نہیں پھٹی، ڈیوائس میں تکنیکی خرابی کی وجہ سے دھماکانہیں ہوا۔

علاوہ ازیں کلفٹن میں چینی ریسٹورینٹ کے مینیجر محمد راشد نے میڈیا سےگفتگو کرتے ہوئے کہا کہ گاڑی میں ریسٹورینٹ کے مالک مسٹر یو سوار تھے جو 35 سال سے کراچی میں ہیں اور ریسٹورینٹ 13 سال سے قائم ہے۔