نون لیگ کی مشکلات میں اضافہ، جرمانے کا نوٹس

لاہور: گریٹر اقبال میں اجازت نہ ملنے کے باوجود جلسہ کرنے پر پاکستان مسلم لیگ (ن) کو ایک کروڑ جرمانہ کا نوٹس بھجوادیا گیا ہے۔

لاہور کے گریٹر اقبال پارک میں انتظامیہ کی جانب سے جلسے کی اجازت نہ دینے کے باوجود نون لیگ نے یہاں جلسہ کیا ، جس کی پاداش میں پی ڈی ایم قائدین کے خلاف مقدمات بھی درج کئے جارہے ہیں اب مسلم لیگ (ن) کو پارکس اینڈ ہارٹیکلچر اتھارٹی (پی ایچ اے) نے ایک کروڑ روپے کا نوٹس بھجوادیا ہے۔پی ایچ اے کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا ہے کہ (ن) لیگ نے اجازت نہ ملنےکےب اوجود گریٹراقبال پارک میں جلسہ کیا، غیر قانونی طورکئے گئے جلسے کے نتیجے میں پارک میں پی ایچ اے کا بہت نقصان ہوا، غیرقانونی جلسے سےنقصان کا تخمینہ تقریبا ایک کروڑبنتاہے۔

نوٹس میں کہا گیا ہے کہ نقصان پورا کرنےکےلیےجرمانہ جمع کروایاجائے، تین دن میں جرمانہ جمع نہ کروانےپر قانونی کارروائی کی جائےگی۔واضح رہے کہ پی ڈی ایم جلسے میں شرکت کرنیوالے کارکنوں نے مینار پاکستان گراؤنڈ کا حلیہ ہی بگاڑ ڈالا۔ سیاسی جماعتوں کے کارکنوں نے مختلف مقامات پر لوہے کے جنگلے اکھاڑ ڈالے۔

بیشتر لائٹس بھی ٹوٹ گئیں جبکہ مہمانوں کے لئے لائے گئے صوفے بھی محفوظ نہ رہے۔ اسی طرح سینکڑوں کرسیاں غائب اور متعدد کو توڑ دیا گیا۔ پنڈال میں جگہ جگہ ڈسپوزیبل ڈبے اور ریپرز نے گراؤنڈ کو کوڑا دن میں تبدیل کر دیا تھا۔ڈائریکٹر پی ایچ اے علی انور کے مطابق پارک کا بھاری نقصان ہوا ہے، کیٹرنگ انتظامیہ کہنا ہے کہ کارکن چھبیس سو کے قریب کرسیاں اٹھا کر لے گئے جبکہ تین سو سے زائد ٹوٹ چکی ہیں۔ جلسے کی وجہ سے کافی نقصان ہوچکا ہے۔