عمران خان کو گھر نہ بھیجنے کی صورت میں فضل الرحمان نے بڑی دھمکی دے دی

اگر عمران خان نہ گیا تو میں ایک اور اعلی شخصیت کے استعفیٰ کا مطالبہ کروں گا ، پی ڈی ایم سربراہ کے حوالے سے سینئر صحافی طاہر ملک کا انکشاف۔ وزیراعظم عمران خان کی حکومت کو نہ گرانے کی صورت میں جمعیت علماء اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے مقتدر حلقوں کو بڑی دھمکی دے دی ، سینئر صحافی طاہر ملک کے مطابق پی ڈی ایم سربراہ دھمکی دیتے ہیں کہ اگر عمران خان نہ گیا تو میں ایک اور اعلی شخصیت کے استعفیٰ کا مطالبہ کروں گا۔ نجی ٹی وی چینل کے ایک پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان کی لڑائی یہ ہے کہ وہ کہتے ہیں ان کی تذلیل ہوئی ہے ، اس لیے اب وہ وزیراعظم عمران خان کی واپسی کے علاوہ کسی قسم کی بات چیت نہیں کریں گے ، ان کی طرف سے ایک اور دھمکی یہ بھی دی جاتی ہے کہ اگر عمران خان کی حکومت نہ گئی تو وہ ایک اور اعلیٰ شخصیت کے استعفیٰ کا مطالبہ کریں گے۔

سینئر صحافی نے بتایا کہ سابق صدر آصف علی زرداری نے مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف کو گرین سگنل دیا ہے کہ انہوں نے مسلم لیگ ق پر کام کرلیا ہے اس لیے اب وہ انتہائی لیول پر نہ جائیں اور الیکشن الیکشن نہ کھیلیں۔ چند روزقبل پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے صدر اور سربراہ جے یوآئی ف مولانا فضل الرحمان نے کہا تھا کہ اسٹیبلشمنٹ کو حکومت کی پشت پناہی چھوڑنے کی مہلت دیتے ہیں،فوج ہمارا دفاعی ادارہ ہے،احترام کرتے ہیں، لیکن اگر وہ سیاسی ادارہ بننے کی کوشش کرے گا تو پھر تنقید برداشت کرنی ہوگی، پھر کلمہ حق بھی کہا جائے گا،تنقید بھی کی جائے گی اور نام بھی لیا جائے گا ، آپ کہہ دیں یہ ہماری حکومت نہیں ہےاس حکومت کیخلاف ہمارے ساتھ ملکر آواز ملائیں، پھر ہم بھائی بھائی ہیں ، آپ سیاست میں نہ آئیں دفاع سے کام رکھیں ، آپ دھاندلی کریں وہ جرم نہیں ، ہم دھاندلی کے خلاف احتجاج کریں آپ خفا ہوتے ہیں لیکن اب برداشت کرنا ہوگا۔