منظور وسان کے بھتیجے کی جلی ہوئی لاش گاڑی سے برآمد

خیرپور: پاکستان پیپلز پارٹی کے نائب صدر منظور وسان کے بھتیجے اے ایس آئی بلاول وسان کی جلی ہوئی لاش ان کی جلی ہوئی گاڑی سے برآمد ہوئی۔ اے ایس آئی بلاول وسان کی گاڑی ایک پول سے ٹکرائی جس کے بعد آگ بھڑک اٹھی، بلاول وسان مکمل طور پر جھلس گئے تھے۔پولیس نے مزید تحیقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔تفصیلات کے مطابق خیرپور بھرگنی کے قریب سڑک پر جلی ہوئی ڈبل کیبن گاڑی سے لاش برآمد ہوئی تھی۔

پولیس کا کہنا تھا کہ جلی ہوئی ڈبل کیبن گاڑی اے ایس آئی بلاول وسان کی ہے جب کہ جلی ہوئی لاش ناقابل شناخت ہے۔واقعے کی تفصیلات حاصل کرنے کے لیے ایم پی اے منور وسان اور ایس ایس پی امیر مسعود مگسی موقع پر پہنچے۔منور وسان کا کہنا تھا کہ اے ایس آئی بلاول وسان کو موبائل فون مسلسل بند جا رہا ہے۔گاڑی بلاول وسان کی ہے۔لاش کے بارے میں کچھ نہیں کہہ سکتے۔

تاہم بعد میں معلوم ہوا کہ گاڑی سے ملنے والی دراصل بلاول وسان کی ہے۔بتایا گیا کہ خیرپور کے علاقے شاہ لطیف میں پاکستان پیپلز پارٹی کے نائب صدر منظور وسان کے بھتیجے اے ایس آئی بلاول وسان کی گاڑی ایک پول سے ٹکرا گئی جس کے باعث گاڑی میں آگ لگ گئی تھی۔آگ سے جھلس کر بلاول وسان جاں بحق ہو گئے۔بلاول وسان کی لاش سول اسپتال منتقل کر دی گئی ہے۔

جس کے بعد لاش کو آبائی گاؤں نواب وسان منتقل کیا جائے گا جہاں نماز جنازہ ادا کی جائے گی۔واقعے کی اطلاع ملتے ہی وسان فیملی آبائی گاؤں پہنچ گئی ہیں۔پولیس نے شک کی بنیاد پر ڈرائیور کو گرفتار کر لیا ہے۔جب کہ بلاول وسان کے جاں بحق ہونے پر کوٹ ڈیجٹی کنب شہر مکمل طور پر بند ہے۔دوسری جانب بلاول وسان کی اچانک موت سے اہلخانہ میں غم کی فضاء ہے، اہل علاقہ بھی یقین نہیں کر ہا رہے کہ بلاول وسان اس دنیا میں نہیں رہے۔لوگوں کی جانب سے ان کے بلند درجات کی دعا کی جا رہا ہے۔