مولانا فضل الرحمٰن کی فرانسیسی مصنوعات کے بائیکاٹ کی اپیل، پورے ہفتے احتجاج اعلان

جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمٰن نے گستاخانہ خاکوں کے معاملے پر فرانسیسی مصنوعات کا استعمال ترک کرنے، تجارتی معاہدے ختم کرنے کی اپیل کی اور پورا ایک ہفتہ روزانہ احتجاج کرنے کا اعلان کیا۔

سکھر میں نیوز کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے اپیل کی کہ عوام فرانسیسی مصنوعات کی بائیکاٹ کریں اور تاجر برادری اور سرکاری سطح پر فرانس سے کیے گئے۔ انہوں نے کہا کہ فرانس کے صدر کی ہدایات پر گستاخانہ خاکوں کو سرکاری عمارت پر آویزاں کیا جاتا ہے اور اسے وہ آزادی اظہار رائے سمجھتے ہیں، لیکن جس عمل سے کسی کی بھی دل آزاری ہو اسے آزادی اظہار رائے نہیں جرم کہا جاتا ہے۔ مولانا کا کہنا تھا کہ اس معاملے یورپی عدالتوں کے فیصلے اور پارلیمنٹس کی آرا موجود ہیں اس کے باوجود یورپی پارلیمان کا ایک رکن اس قسم کی حرکت کرتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ عجیب یورپ ہے کہ اپنے آپ کو حضرت عیسیٰ کا پیروکار سمجھتے ہیں لیکن ان کی بھی توہین پر مسلمان آواز اٹھاتے ہیں۔ مولانا فضل الرحمٰن نے اعلان کیا کہ آئندہ جمعے سے اگلے جمعے تک پورا ہفتہ فرانس میں گستاخانہ معاملوں پر احتجاج کرتے ہوئے منایا جائے گا اور روزانہ عوام سڑکوں پر آ کر اپنا احتجاج ریکارڈ کریں