حکومت مخالف تحریک ، رانا ثناءاللہ نے جلسوں کے بعد اگلا لائحہ عمل بھی بتا دیا

لاہور(نیوز ڈیسک) مسلم لیگ ن کے رہنما راناثناء اللہ نے کہا ہے کہ ہم جلسوں کے بعد ریلیوں کی طرف جائیں گے اور جب پی ڈی ایم کی قیادت مناسب سمجھے گی تو استعفے بھی دیے جائیں گے ، پی ڈی ایم کے جلسے سے مولانا فضل الرحمان ، مریم نواز اور بلاول بھٹو خطاب کریں گے ۔ لاہور میں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ ہمارے خلاف بے بنیاد مقدمہ درج کیا گیا ہے اور یہ 16اکتوبر کے جلسے پر اثر اندا ز ہونے کی کوشش ہے ، 16اکتوبرکو نا اہل حکومت کے خلاف ریفرینڈم ہوگا ، کیوں کہ لوگ حکومت سے تنگ آچکے ہیں ،

لیکن حکومت کی طرف سے اس سے پہلے ہی سیاسی کارکنوں کو انتقام کا نشانہ بنایا جارہا ہے ، مقدمات سیاسی رہنماؤں اور کارکنوں کو مصروف رکھنے کی سازش ہے ۔راناثناءاللہ نے کہا کہ حکومت مخالف تحریک کے دوران جب قیادت کو صحیح لگے گا تو استعفے بھی دیئے جائیں گے ، اگر حکومت نے کریک ڈاؤن کیا تو ہمارا بیانیہ سچ ثابت ہوگا۔دوسری طرف 16 اکتبوبر کو ہی پاکستان تحریک انصاف نے بھی گوجرانوالہ میں ‘محب وطن’ ریلی نکالنے کا اعلان کردیا۔

پاکستان تحریک انصاف نے 16 اکتوبر کو گوجرانوالہ میں ریلی اور جلسہ کرنے کا اعلان کیا ہے ، وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے ملاقات کے بعد تحریک انصاف کے رہنما یونس انصاری نے گوجرانوالہ میں ریلی نکالنے کا اعلان کیا ، پارٹی سے اجازت کے بغیر وزیراعلیٰ پنجاب سے ملاقات کرنے کے باعث مسلم لیگ ن کے معطل رکن صوبائی اسمبلی اشرف انصاری نے رہنما تحریک انصاف یونس انصاری کے ہمراہ لاہور میں عثمان بزدار سے ملاقات کی ، ملاقات میں ن لیگ کی نائب صدر مریم نواز کے گوجرانولہ میں جلسہ کے حوالے سے حکمت عملی پر غور کیا گیا ہے۔