رحمان ملک نے بڑا راز افشا کر دیا

اسلام آباد (نیوزڈئسک) پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما اور سابق وزیر داخلہ سینیٹر رحمان ملک نے کہا ہے کہ انہوں نے داعش اور بھارت کے گٹھ جوڑ کو دو سال پہلے ہی افشا کر دیا تھا۔تفصیلات کے مطابق امریکی میگزین فارن پالیسی نے گزشتہ روز اپنی ایک رپورٹ میں بھارت اور داعش کے گٹھ جوڑ پر تفصیلی رپورٹ شائع کرتے ہوئے اسے علاقائی اور بین الاقوامی امن کیلئے تباہ کن خطرہ قرار دیا تھا۔

رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ بھارت نے داعش کے ساتھ مل کر اسٹاک ہوم، ترکی اور سری لنکا میں چرچ پر حملے بھی کروائے۔اس کے علاوہ فارن پالیسی کی رپورٹ میں بھارت کی جانب سے داعش کو افغانستان اور مقبوضہ کشمیر میں استعمال کرنے کا حوالہ بھی دیا تھا۔فارن پالیسی میگزین کی رپورٹ کے بعد سینیٹر رحمان ملک نے سوشل میڈیا پر ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہاکہ انہوں نے داعش اور بھارت کے گٹھ جوڑ کو دو سال پہلے ہی افشا کر دیا تھا۔

انہوں نے کہاکہ میں نے اپنے آرٹیکل ’مودیز وار ڈاکٹرائن‘ میں بتایا کہ بھارت کی این ایس اے نے عراق میں داعش کے سربراہ سے ملاقات کی تھی۔سینیٹر رحمان ملک نے کہاکہ میں نے یہ بھی بتا دیا تھا کہ بھارت کیسے داعش کو مقبوضہ جموں و کشمیر میں استعمال کر رہا ہے، سری لنکا اور افغانستان میں داعش کے استعمال کے حوالے سے بھی میرے انکشافات ریکارڈ پر ہیں۔