اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز کے حوالے سے بڑی خبر منظر عام پر آگئی

لاہور (نیوز ڈیسک ) پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف مسلم لیگ نواز کے رہنما حمزہ شہباز شریف کے پروڈکشن آرڈرجاری کردیے گئے ۔ اس حوالے سے تفصیلات میں بتایا گیا ہے کہ پنجاب اسمبلی کے اسپیکر چوہدری پرویز الہٰی کی طرف سے مسلم لیگ ن کے رہنما حمزہ شہباز شریف کے پروڈکشن آڈر جاری کیے گئے ، جس کے بعد صوبائی اسمبلی کے اگلے اجلاس میں شرکت کرسکیں گے ۔

واضح رہے کہ قبل ازیں خبر آئی تھی کہ پنجاب اسمبلی مین اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز شریف کو کورونا ہوگیا ، کورونا ٹیسٹ مثبت آنے سے ایک دن پہلے حمزہ شہباز نے اپنے والد شہبازشریف سے بھی ملاقات کی ۔ تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر اور مسلم لیگ ن کے صدر شہبازشریف نے بتایا ہے کہ ان کے بیٹے حمزہ شہبازکو جیل میں کورونا ہوگیا اور وہ سیاسی انتقام کا انتہائی جرات مندی سے سامنا کر رہا ہے ۔

سابق وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا کہ حمزہ شہباز مشرف دور کے بعد نیب نیازی گٹھ جوڑ کا سامنا کررہا ہے ۔ مسلم لیگ ن کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ حمزہ شہباز گزشتہ تین روز سے شدید بخار میں مبتلا ہیں ، بگڑتی ہوئی صحت کو دیکھتے ہوئے انہیں کوٹ لکھپت جیل سے فوری اسپتال منتقل کیا جائے ، علاج میں سستی یا لاپرواہی سے پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف کی صحت خطرے سے دوچار ہوسکتی ہے۔

یاد رہے کہ اس سے قبل مسلم لیگ ن کے مرکزی صدر شہبازشریف کا کورونا ٹیسٹ بھی مثبت آیا تھا جس پر انہوں نے خود کو قرنطینہ کر لیا تھا جبکہ مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال، سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی، ن لیگ کی ترجمان مریم اورنگزیب اور خواجہ سلمان رفیق کا کورونا ٹیسٹ بھی مثبت آیا تھا ، جس پر مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے دوران حراست نوازشریف کو دی جانے والی خوراک اور جیل میں حمزہ شہباز شریف کو کورونا ہونے پر سوالات کھڑے کردیے ۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں انہوں نے لکھا کہ ابھی تو یہ تحقیق ہونا باقی کہ گھر کا کھانا بند کر کے نواز شریف کو نیب میں کیاخوراک دی جاتی رہی کہ یکا یک ان کی بیماری میں شدت آگئی ، ان کے پلیٹلٹس خطرناک حد تک گر گئے اور انہیں ہارٹ اٹیک ہوا۔ مریم نواز نے مزید لکھا کہ سوال تو یہ بھی ہے کہ کال کوٹھڑی میں بند تنہا قیدی کرونا وائرس کی زد میں کیسے آگیا؟