نیب کا احسن اقبال اور خواجہ آصف کی ضمانتوں کیخلاف سپریم کورٹ میں اپیل کا فیصلہ

قومی احتساب بیورو (نیب) نے مسلم لیگ ن کے جنرل سیکرٹری احسن اقبال کی اسلام آبادہائی کورٹ سےضمانت کےخلاف سپریم کورٹ میں اپیل دائر کرنےکا فیصلہ کیا ہے۔ نیب کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق نیب نےاحسن اقبال کےخلاف احتساب عدالت اسلام آبادمیں ریفرنس دائرکیا تھا جو زیرسماعت ہے، نیب نے احتساب عدالت اسلام آباد میں کیس کی روزانہ سماعت کی درخواست دائرکرنےکا بھی فیصلہ کیا ہے۔

اعلامیے کے مطابق نیب نے ن لیگی رہنما خواجہ آصف کی ضمانت کے خلاف بھی سپریم کورٹ میں اپیل دائرکرنےکافیصلہ کیا ہے۔خیال رہے کہ اسلام آباد ہائی کورٹ نے نارووال اسپورٹس سٹی کمپلیکس کیس میں احسن اقبال کی گرفتاری کو اختیار سے تجاوز قرار دیا تھا۔

ضمانت کے تفصیلی فیصلے میں عدالت نے قرار دیا کہ احسن اقبال کے خلاف نیب کرپشن کے ثبوت پیش کرنے میں ناکام رہا، تسلیم شدہ بات ہے منصوبہ نارووال کی عوام کے استعمال اور فائدے کیلئے شروع کیا گیا، منصوبے کی منظوری مجاز فورم سی ڈی ڈبلیو پی نے دی، احسن اقبال نے پراجیکٹ سے کوئی مالی فائدہ نہیں اٹھایا۔

واضح رہےکہ احسن اقبال کی نارووال اسپورٹس سٹی کمپلیکس کیس میں ضمانت 25 فروری 2020 کو ہوئی تھی۔
دوسری جانب لاہور ہائی کورٹ نے بھی خواجہ آصف کی ضمانت پر رہائی کا فیصلہ سناتے ہوئے کہا تھا کہ یہ تسلیم شدہ حقیقت ہے کہ خواجہ آصف نے قومی خزانے کو نقصان نہیں پہنچایا۔