نیپرا نے بجلی کی قیمت میں اضافے کی منظوری دیدی

اسلام آباد : نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) نے بجلی کی قیمت میں ایک روپے 95 پیسے اضافے کی منظوری دے دی۔ نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) کی جانب سے عوام پر بجلی بم گرادیا گیا، نیپرا نے وفاقی حکومت کی درخواست پر بجلی کی قیمت میں اضافہ کردیا۔الیکٹرک کی قیمت میں 1 روپے 95 پیسے فی یونٹ اضافے کے بعد بجلی کا اوسط ٹیرف 14.38 روپے سے بڑھ کر 16.33 روپے فی یونٹ مقرر کردیا گیا۔

نیپرا کا کہنا ہے کہ فیصلے کا اطلاق 50 یونٹ تک غریب صارفین پر بھی یکساں ہوگا اور فیصلے سے صارفین پر دو سو ارب روپے کا اضافہ بوجھ پڑے گا۔حکومت نے پیٹرول کے بعد بجلی کی قیمت میں اضافہ کردیا

نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی کے مطابق کے الیکٹرک کے صارفین پر فیصلے کا اطلاق نہیں ہوگا اور نئی قیمتوں کا اطلاق بھی وفاقی حکومت کے نوٹی فیکشن کے بعد ہوگا۔یاد رہے کہ 21 جنوری کو وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب نے کہاتھا کہ ن لیگ کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے بجلی کی قیمت میں دو روپے اٹھارہ پیسے اضافہ ہونا تھا لیکن ہم نے بجلی کی قیمت میں ایک روپے 95 پیسے اضافہ کیا۔