گینگ وار کا سرغنہ عزیر بلوچ قتل کے مزید دو مقدمات میں بری

کراچی: گینگ وار کے سرغنہ عزیر بلوچ کی بریت کا سلسلہ جاری ہے۔ماڈل کورٹ جنوبی کی عدالت نے عدم شواہد کی بناء پر قتل کے دونوں مقدمات میں بری کردیا۔ کراچی سینٹرل جیل میں جوڈیشل کمپلیکس میں ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نے گینگ وار کے سرغنہ عذیر بلوچ کیخلاف قتل کے دو مقدمات میں بریت کی درخواست پر فیصلہ سنادیا۔ عدالت نے عدم شواہد کی بناء پر دونوں مقدمات میں عذیر بلوچ کو بری کردیا۔

عدالت نے حکم دیا کہ عزیر بلوچ کسی اور کیس میں نامزد نہ ہوتو فوری رہا کیا جائے۔ عزیر بلوچ کیخلاف نامعلوم افراد کے قتل کا الزام تھا۔ملزم عزیر بلوچ کیخلاف تھانہ بغدادی اور کلاکوٹ میں مقدمات درج تھے۔ یہ مقدمات 2004 میں درج کئے گئے تھے۔ عذیر بلوچ اب تک 6 مقدمات میں بری ہوچکا ہے۔