کورونا ویکسینیشن سینٹرز کو یکم فروری سے فعال کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد : وفاقی دارلحکومت میں کورونا ویکسینیشن سینٹرز کویکم فروری سے فعال کرنے کا فیصلہ کرلیا اور 30 جنوری تک ویکسینیشن سینٹرزمیں مطلوبہ سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت کردی ہے۔ انسداد کورونا مہم کے پہلے فیز کے لیے تیاریاں جاری ہے ، اسلام آباد کے کورونا ویکسینیشن سینٹرز کویکم فروری سےفعال کرنےکافیصلہ کرلیا گیا ، اس حوالے سے ضلعی محکمہ صحت نے وفاقی اسپتالوں کی انتظامیہ کومراسلہ بھجوادیا ہے۔

وفاقی ویکسینیشن سینٹرزمیں کام30 جنوری تک مکمل کرنے اور 14 ویکسینیشن سینٹرزمیں مطلوبہ سہولیات30جنوری تک فراہم کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔اسلام آباد کے ویکسینیشن سینٹرزمیں عملہ یکم فروری کوتعینات ہوگا اور کوروناویکسین کی دستیابی پرویکسینیشن کے پہلے فیزکا آغاز ہوجائے گا، اسلام آبادکے ہر کورونا ویکسینیشن سینٹرمیں 3رکنی عملہ تعینات ہو گا۔

یاد رہے وفاقی دارالحکومت میں ویکسی نیشن مراکز کی تعداد بڑھا کر 14 کر دی گئی تھی، ذرائع کا کہنا تھا کہ ویکسی نیشن مراکزکی تعداد میں اضافےکافیصلہ عوامی سہولت کےپیش نظرکیاگیا۔

اسلام آباد کے شہری اور دیہی علاقوں میں ویکسی نیشن مراکزقائم ہیں، اسلام آباد کے 6سرکاری اسپتالوں میں ویکسی نیشن مراکز قائم کیے گئے ہیں، جن میں پمز ،سی ڈی اے اسپتال ، پولی کلینک، فیڈرل گورنمنٹ اسپتال ، سوشل سیکورٹی اور نرم اسپتال شامل ہیں۔

اسلام آباد کے 5دیہی ، بنیادی مراکز صحت میں ویکسی نیشن ہوگی، بہارہ کہو،سہالہ،ترلائی کے دیہی، شاہ اللہ دتہ، تمیر کے مراکز صحت سمیت سی ڈی اے کےآئی 8 اور ایف 11 میڈیکل سینٹرز میں ویکسی نیشن کی جائے گی۔