دھماکہ کیسے ہوا؟ مسکن چورنگی میں ہونے والے دھماکے کی رپورٹ تیار

کراچی (روزنیوز) کراچی کے علاقے گلشن اقبال میں مسکن چورنگی کے قریب ہونے والے دھماکے میں 5 افراد جاں بحق جب کہ 20 زخمی ہوگئےہیں۔مسکن چورنگی میں ہونے والے دھماکے کی رپورٹ تیار کر لی گئی ہے۔بم ڈسپوزل اسکواڈ کے عملے نے جائے دھماکہ کا معائنہ مکمل کر لیا ہے۔ بم ڈسپوزل اسکواڈ کا کہنا ہے کہ دھماکہ گیس لیکج کے باعث ہوا۔

بم ڈسپوزل اسکواڈ کے مطابق دھماکے کی جگہ سے بارودی مواد کے شواہد نہیں ملے۔بم ڈسپوزل اسکواڈ نے ابتدائی رپورٹ پولیس کے حوالے کر دی ہے۔بم ڈسپوزل اسکواڈ نے واضح کیا ہے کہ عمارت کے اندر ہونے والا دھماکہ گیس لیکج کے باعث ہوا ہے۔کسی بھی قسم کے بارودی مواد یا تخریب کاری کے شواہد نہیں ملے۔واضح رہے کہ آج صبح شہر قائد میں گلشن اقبال کے علاقے مسکن چورنگی کے قریب دھماکہ ہوا ، جس کی آواز دور تک سنی گئی ، اس دھماکے میں اب تک کی اطلاعات کے مطابق 5 افراد جاں بحق اور 20 افراد زخمی ہوئے ، وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے رپورٹ طلب کرلی ، جب کہ پولیس کی طرف سے دھماکے کی نوعیت کا تعین نہیں کیا جاسکا۔

ریسکیو ذرائع کے مطابق دھماکہ عمارت کے میزنائن فلور میں ہوا ، جس کی وجہ سے متعدد فلیٹس کے شیشے بھی ٹوٹ گئے ، عمارت کے گراونڈ فلور پر موجود بینک کو بھی اس دھماکے سے نقصان پہنچا۔ کمشنر کراچی کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ دھماکے کی وجہ سے عمارت مکمل طور پر خستہ ہوچکی ، اس کو اب گرانا پڑے گا۔ دوسری طرف زخمیوں میں سے متعدد کی حالت نازک ہے ، زخمیوں کو قریبی ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔ بتایا گیا ہے کہ یہ دھماکہ گلشن چورنگی کے قریب واقع ایک عمارت میں ہوا جس سے اس رہائشی عمارت کا ایک حصہ بھی گر گیا اور عمارت کی پہلی اور دوسری منزل کو زیادہ نقصان پہنچا