friend daughter sucking sideways big rod.videos porno
desi porn
pornoxxx

برقع نہ ہو تو خواتین خود کو ‘کمبل’ سے ڈھانپ کر کام پر جائیں: طالبان

افغان طالبان نے سرکاری اداروں کی خواتین ملازمین کے لیے احکامات جاری کیے ہیں جن میں انہیں ہر صورت خود کو ڈھانپ کر ملازمت پر جانے کا حکم دیا گیا ہے۔ گزشتہ برس افغانستان میں طالبان کے اقتدار میں آنے کے بعد سے ملک میں خواتین سے متعلق اہم فیصلے سامنے آئے جن میں خواتین کو تنہا طویل سفر کرنے سے منع کیا گیا ہے جب کہ ان کے کھیلوں کی سرگرمیوں پر بھی پابندی نافذ کی گئی۔

تاہم اب حال ہی میں طالبان کی مذہبی پولیس کی جانب سے ہدایت نامہ جاری کیا گیا جس میں کہا گیا ہے کہ اگر خواتین ملازمین چاہتی ہیں کہ ان کی ملازمت برقرار رہے تو انہیں خود کو اچھی طرح سے ڈھانپ کر دفاتر آنا ہوگا۔ ہدایت نامے میں کہا گیا ہےکہ یہ احکامات برائی کی روک تھام اور نیکی کے فروغ کے لیے جاری کیے گئے ہیں جس پر عمل درآمد نہ کرنے کی صورت میں خواتین کو اپنی ملازمتوں سے ہاتھ دھونا پڑسکتے ہیں۔

طالبان کی ایک وزارت کے ترجمان محمد صادق عاکف نے اے ایف پی کو دیے گئے انٹرویو میں کہا کہ یہ خواتین کی مرضی پر منحصر ہے کہ وہ کس طرح کا حجاب کرتی ہیں، پہلے بھی خواتین اپنا سر ڈھکتی تھیں لیکن اب ان کے لیے برقع بھی لازمی کردیا گیا ہے، اگر ان کے پاس برقع نہیں تو وہ خود کو بے شک کمبل سے ڈھانپ کر دفتر جائیں۔

spanish flamenca dancer rides black cock.sex aunty
https://www.motphim.cc/
prmovies teen dildo wet blonde stunner does it on the hood of car.