امیر کویت شیخ صباح الاحمد الجابر الصباح انتقال کرگئے

خلیجی ملک کویت کے امیر شیخ صباح الاحمد الجابر الصباح 91 برس کی عمر میں انتقال کرگئے۔

امیرکویت کی جولائی میں اپنے ملک میں سرجری کی گئی تھی جس کے بعد وہ مکمل علاج کے لیے امریکا روانہ ہوگئے تھے۔ ان کی صحت میں بہتری سے متعلق 14 ستمبر کو کویتی وزیر اعظم نے کابینہ کو آگاہ کیا تھا۔

غیرملکی خبررساں ایجنسی کے مطابق امیرِ کویت امریکا میں زیر علاج تھے جہاں آج ان کا انتقال ہوا جس کی تصدیق حکام نے کردی ہے۔ وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے امیرکویت کےانتقال پراظہارتعزیت کیا ہے۔ اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ شیخ صباح الاحمد کے دور میں پاکستان کویت تعلقات کو وسعت ملی، امیر کویت امن پسند حکمراں تھے۔

خیال رہے کہ شیخ صباح الاحمد الجابرالصباح 2006 میں امیر کویت بنے اور اپنی علالت تک اس عہدے پر فائز رہے۔ شیخ صباح الاحمد الجابرالصباح کویت کے وزیر اعظم بھی رہے ہیں جب کہ وہ کویت کے 40 سال تک وزیر خارجہ بھی رہے۔

ان کے انتقال کے بعد ان کے 83 سالہ سوتیلے بھائی شیخ نواف الاحمد الصباح کے امیر کویت بننے کا امکان ہے تاہم باقاعدہ اعلان کچھ روز میں کیا جائے گا۔