جاپان نے کرونا کا توڑ نکال لیا، اب وائرس ختم ہوسکتا ہے

ٹوکیو: جاپانی کمپنی نے دنیا کا پہلا اور ایسا خصوصی لیمپ تیار کیا ہے جس کی شعاعیں کروناوائرس کا خاتمہ کرسکتی ہیں، الٹرا وائلٹ شعائیں جہاں تک پہنچے گی وہاں سے وائرس مٹ جائے گا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق جاپانی کمپنی کے ماہرین نے (کیئر 222) نامی یو وی لیمپ تیا کیا ہے جس میں مہلک وائرس کو ختم کرنے کی صلاحتیں موجود ہیں جبکہ انسانوں پر اس کے منفی اثرات بھی مرتب نہیں ہوتے۔

یوشیو نامی جاپانی کمپنی نے دعویٰ کیا ہے کہ اس لیمپ کے ذریعے ان جگہوں کو جراثیم یا دیگر مہلک وائرس سے پاک کیا جاسکتا ہے جہاں پر انسانوں کی موجودگی ہو جیسے دفاتر، تعلیمی ادارے یا پبلک ٹرانسپورٹ وغیرہ، الٹرا وائلٹ شعاعوں کی ویو لینتھ سے جراثیم اور وائرس ختم ہوجاتے ہیں۔

کمپنی کے مطابق اس لیمپ میں 222 نانومیٹر ویو لینتھ موجود ہے جو وائرس کو ختم کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے اور اس سے انسانی آنکھوں یا جلد کو کوئی نقصان بھی نہیں پہنچتا، یہ ہرقسم کے 99 فیصد وائرس یا بیکٹریا کا خاتمہ کرتا ہے۔

اس لیمپ کی شعاعوں کی رینج تقریبا ڈھائی میٹر ہے اس درمیان موجود وائرس مر جائیں گے۔

خیال رہے کہ اس لیمپ سے قبل حالیہ دنوں ایک امریکی کمپنی نے ایسا اسمارٹ پنکھا متعارف کرایا تھا جو کرونا کا باعث بننے والے وائرس کو مارنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔