روس میں 100 سال بعد پہلی شاہی شادی

روس میں ایک صدی سے بھی زائد عرصے کے بعد پہلی شاہی شادی کی تقریب سجائی گئی۔ روس کے شہر سینٹ پیٹرز برگ کے اساق کیتھیڈرل چرچ میں ڈیوک جارج میخائلووچ رومانوو نے اٹلی کی وکٹوریہ رومانوونا بٹارینی سے شادی کی۔

رومانوو خاندان کی بنیاد پہلی بار 1613 میں میخائل رومانوو نے رکھی جس کے بعد ان کے پوتے پیٹر نے رومانوو سلطنت کو پروان چڑھایا۔ رومانوو خاندان 1917 تک کمیونسٹ پارٹی کے اقتدار میں آنے تک روس پر حکومت کرتا رہا اور پھر شاہی خاندان کے افراد کو 1918 میں سزائے موت دیدی گئی۔

دولہا میخائلووچ اور ان کی والدہ ماریہ ولادمیروونا اپنا تعلق شاہی خاندان سے ظاہر کرتےہیں اور ان کے جد امجد ڈیوک کرل ولادمیرووچ 1917 میں اس وقت روس سے فرار ہو کر یورپ چلے گئے تھے جب ولادمیر لینن نے اقتدار سنبھالا۔
میڈرڈ میں پیدا ہونے والے میخائلووچ نے اپنی زیادہ تر زندگی اسپین اور فرانس میں گزاری اور انہوں نے 1992 تک روس نہیں دیکھا تھا، پھر میخائلووچ 2019 میں ماسکو آئے اور انہوں نے فلاحی کاموں اپنی توجہ مرکوز کر لی۔