پاکستان پر افغان طالبان کو پناہ دینے کا الزام، امریکی سینیٹ میں پاکستان مخالف بل پیش

واشنگٹن (حسنات بلوچ) امریکی سینیٹ میں پاکستان مخالف بل پیش کیا گیا جس میں پاکستان پر افغان طالبان کو پناہ دینے کا الزام لگایا گیا۔

امریکی سینیٹر مارکو روبیو نے سینیٹر جم رسچ اور دیگر بیس ری پبلکن ساتھیوں کے ساتھ مل کر سینٹ میں افغانستان کیلئے انسدادِ دہشت گردی، نگرانی اور احتساب بل پیش کیا۔

بل میں کہا گیا ہے طالبان کا ساتھ دینے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے۔ پاکستان سمیت طالبان کو مدد دینے والی ریاستوں اور غیر ریاستی افراد کی نشاندہی کی جائے۔ بل میں طالبان کی معاونت کرنے والے افراد اور ممالک پر پابندیوں کی سفارش بھی کی گئی ہے ۔

بل میں پاکستان پر افغان طالبان کو پناہ دینے کا الزام لگایا گیا ہے۔ کہا گیا ہے کہ پاکستان نے طالبان کو 2001 سے 2020 تک مالی، انٹیلی جنس ، لاجسٹک اور میڈیکل سپورٹ فراہم کی۔ طالبان کو تربیت، سامان اور تذویراتی اور آپریشنل رہنمائی فراہم کی۔