امریکہ نے غلطی کا اعتراف کر لیااور معافی مانگ لی،حاليہ ڈرون حملہ ايک غلطی تھی: امريکی وزير خارجہ لائڈ آسٹن

(حسنات بلوچ)امريکا نے اعتراف کر ليا ہے کہ ’اسلامک اسٹيٹ‘ کے مشتبہ جنگجوؤں کے خلاف کيا جانے والا ايک حاليہ ڈرون حملہ در اصل ايک غلطی ثابت ہوا اور اس کے نتيجے ميں دس افغان شہری بشمول بچے ہلاک ہوئے۔
امريکی مرکزی کمان کے کمانڈر جنرل کينتھ مک کينزی نے اس واقعے کی تحقيقات ختم ہونے کے بعد ايک پريس کانفرنس ميں تسليم کيا کہ يہ ايک غلطی تھی۔
امريکی وزير خارجہ لائڈ آسٹن نے متاثرين کے اہل خانہ سے افسوس کا اظہار کيا اور معافی طلب کی۔

متاثرہ خاندانوں کو رقوم ادا کی جائيں گی مگر فی الحال يہ واضح نہيں کہ کتنی اور کب۔ يہ واقعہ انتيس اگست کو کابل ميں پيش آيا تھا، جب امريکی افواج نے ايک انٹيليجنس رپورٹ پر کارروائی کرتے ہوئے ايک گاڑی کو نشانہ بنايا تھا۔