فغان طالبان کے شدید ترین مخالف اور سابق نائب صدر کے پرتعیش محل میںجنگجوں کے ڈیرے

(حسنات بلوچ) طالبان نے کابل میں واقع عبدالرشید دوستم کے پرتعیش محل پر قبضہ کر لیا ہے اور طالبان جنگجوؤں کا کہنا ہے کہ سابق افغان نائب صدر کا یہ محل ان کرپشن کا منہ بولتا ثبوت ہے۔

خبر ایجنسی کے مطابق محل کے دورے کے موقع پر ایک طالبان جنگجو کو عبدالرشید دوستم کے گھر میں موجود ایک صوفے پر آرام کرتے دیکھا گیا جس کے ساتھ کلاشنکوف بھی موجود تھی۔

اے ایف پی کے مطابق ایسے پرتعیش محل میں رہنا تو دور کی بات عام افغان شہریوں کیلئے اس بارے میں سوچنا بھی محال ہے۔
خبر ایجنسی کے مطابق یہ سب کچھ افغانستان کو فتح کرنے والے طالبان کے لیے ایک نئی دنیا سے کم نہیں ہے کیونکہ طالبان جنگجو کئی برسوں سے زمین پر اپنے ہاتھوں کو تکیہ بنا کر سوتے رہے، پہاڑوں پر اور دور دراز وادیوں میں رہائش پزیر رہے۔

15 اگست کو اپنے ساتھیوں کے ساتھ عبدالرشید دوستم کے محل میں داخل ہونے والے طالبان کمانڈر قاری صلاح الدین ایوبی کا کہنا ہے کہ اسلام ہمیں پرتعیش زندگی کی اجازت نہیں دیتا، عیش و عشرت کی زندگی تو مرنے کے بعد جنت میں ملے گی۔