کورونا مریضوں سے متعلق ٹرمپ کے خوفناک منصوبے کا انکشاف

واشنگٹن : دو امریکی صحافیوں نے انکشاف کیا ہے کہ سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کرونا وائرس کے شکار افراد کو گوانتانا موبے جیل میں بھیجنا چاہتے تھے۔

سابق صدر ٹرمپ کے کرونا مریضوں سے متعلق خوفناک ارادوں کا انکشاف امریکی صحافیوں نے اپنی کتاب میں کیا، جس میں کہا گیا ہے کہ امریکا میں کرونا کی بدترین صورتحال سے نمٹنے کےلیے ٹرمپ نے کرونا مریضوں کو گوانتانا جیل بھیجنا چاہا۔

ٹرمپ کا خیال تھا کہ کرونا وائرس میں مبتلا افراد کو کسی آئس لینڈ یا جزیرے پر بھیج دیا جائے، صحافیوں نے انکشاف کیا کہ ٹرمپ نے فروری 2020 میں ہونے والی ایک میٹنگ میں اپنے اسٹاف سے پوچھا کہ کیا ہم کسی آئس لینڈ کے مالک ہیں؟ گوانتانا موبے کے بارے میں کیا خیال ہے؟

خیال رہے کہ کیوبا میں واقع امریکا کی گوانتانا موبے جیل میں انتہائی سنگین نوعیت کے جرائم میں ملوث قیدیوں و دہشت گردوں کو قید کیا جاتا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق اس میٹنگ کے بعد ٹرمپ خود کرونا وائرس کی لپیٹ میں آگئے اور انہیں اسپتال منتقل کردیا گیا۔ جان ہاپکنز یونیورسٹی کی رپورٹ کے مطابق ٹرمپ کے دور حکومت تک امریکا میں کورونا سے 4 لاکھ افراد ہلاک ہوچکے تھے۔