بھارت: لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی پر سرِ عام سزا دینے کا عمل شروع، ویڈیو دیکھیں

بھارتی ریاست مہاشٹرا کی پولیس نے کرونا لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی کرنے والوں کو سرعام سزا دینا شروع کردی۔بھارت میں کرونا کی نئی قسم کی ہلاکت خیزی جاری ہے، یومیہ بنیادوں پر جہاں لاکھوں نئے کیسز رپورٹ ہورہے ہیں وہیں اموات میں بھی اضافہ ہوا ہے۔

بھارت میں کرونا سے مرنے والوں کی تعداد میں اس حد تک اضافہ ہوا ہے کہ اب قبرستانوں تدفین اور شمشان گھاٹوں میں آخری رسومات ادا کرنے کی گنجائش ختم ہوگئی ہے، جس کی وجہ سے شہری اپنے پیاروں کی لاشیں گھروں میں رکھ کر باری کے منتظر ہیں۔

کرونا کی بگڑتی صورت حال کے بعد زیادہ متاثر ہونے والی ریاست کی حکومتوں نے سخت لاک ڈاؤن نافذ کرنے کا اعلان کیا۔ مہارشٹرا کی ریاست بھی اُن ریاستوں میں شامل ہیں جہاں صورت حال گھمبیر ہوچکی ہے۔
یہ بھی پڑھیں: اسپتالوں کو آکسیجن فراہمی روکنے والوں کو پھانسی دی جائیگی: دہلی ہائیکورٹ

ریاست مہارشٹرا کی حکومت نے تمام علاقوں میں سخت لاک ڈاؤن کے نفاذ کے ساتھ رات کے وقت کرفیو کا اعلان کیا ہے۔ مقامی حکومت نے لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی کرنے والے شہریوں کو سرعام سزا دینے کا اختیار پولیس کو تفویض کردیا۔

انٹرنیٹ پر وائرل ہونے والی ویڈیو ریاست مہاشٹرا کے علاقے مندسور کی ہے، جس میں دیکھا جاسکتا ہے کہ پولیس اہلکاروں نے گشت کے دوران سڑک پر گھومنے والے افراد کی پھینٹی لگائی اور انہیں سڑک پر روک کر سزائیں بھی دیں۔

پولیس اہلکاروں نے سڑک پر گھومنے والے افراد کا تعاقب کیا اور اُن کی باز پرس بھی کی۔ جن لوگوں نے گھروں سے باہر نکلنے کی کوئی مناسب وجہ بیان نہیں کی تو انہیں سڑک پر اٹھک بیٹھک اور مرغا بنانے کی سزا دی گئی۔

اہلکاروں نے سزا دینے کے کچھ دیر بعد نوجوانوں کو تاکید کر کے چھوڑا کے اب وہ گھروں میں جاکر بیٹھیں اور لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی نہ کریں۔